بھارت کے پہلے وزیر تعلیم کے یوم پیدائش پر تقربات کا اہتمام

پونچھ//ملک کے پہلے وزیر تعلیم مولانا ابوالکلام آزاد کا 133واں یوم پیدائش ملک بھرکی طرح پونچھ میں بھی یوم تعلیم کے عنوان سے جوش و خروش سے منایا گیا۔بھارت میں 2008 سے مولانا ابوالکلام آزاد کے یوم پیدائش کے موقع 11 نومبر کو 'قومی یوم تعلیم' کے طور پر منایا جانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔واضح رہے کہ مولانا آزاد کی پیدائش 11 نومبر 1888 میں مکہ مکرمہ میں ہوئی تھی۔ وہ 15 اگست 1947 کے بعد سے یکم فروری 1958 تک پہلے وزیر تعلیم تھے۔ان کے133 ویں پیدائش پر تحصیل منڈی کے گورنمنٹ ماڈل ہائر سکنڈری اسکول ساوجیاں میں ایک تقریب منعقد ہوئی جس میں یوم تعلیم کی مناسبت سے مقررین نے اپنے خیالات کا اظہار کیا اور بھارت کے پہلے وزیر تعلیم کو خراج عقیدت پیش کیا گیا۔ اس تقریب کی صدارت ماڈل ہائیر سکینڈری سکول کے پرنسپل انور خان نے کی۔ مقررین نے ناصرف مولانا ابوالکلام آزاد کی ادبی اور صحافتی خدمات کا تذکرہ کیا بلکہ وطن کی آزادی کیلئے ان کی جدوجہد کا بھی ذکر کیا اور ان کو ایک سچا محب وطن قرار دیا۔ اس تقریب میں سکول کے سینئر لیکچرز ماسٹر ٹیچر اور طلبا شامل تھے جن میں رگھو ناتھ ورما،جوتی جموال، مختار احمد، منیر حسین اور رشمی سودھن کے نام قابل ذکر ہیں۔ اسکول کے سٹاف اور طلبا نے  مولانا آزاد کی تعلیمی اور سیاسی خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے ان کو جدید تعلیمی نظام کا معمار قرار دیتے ہوئے ان کو خراج عقیدت پیش کیا اور یہ عہد کیا کہ وہ ان کے نقش قدم پر چل کر ملک کے تعلیمی نظام کو بہتر کرنے میں اپنا کردار ادا کریں گے اور کوشش کریں گے کہ ہر اک بھارتی شہری تعلیم کے زیور سے آراستہ و پیراستہ ہو ۔ مولانا ابوالکلام آزاد کے 3 13 ویں سالگرہ  پر ضلع پونچھ کے مختلف اداروں  میں تقریبات منعقد کی گئی جہا مقررین نے کہا کہ مولانا ابوالکلام ازاد ماہر تعلیم اور مجاہد آزادی مولانا آزاد نے تعلیم یافتہ بھارت کی بنیاد رکھی، تاہم مولانا آزاد کے انتقال کے بعد انہیں ملک کے سب سے بڑے اعزاز 'بھارت رتن' سے بھی نوازا گیا۔انہوں نے مسلمانوں میں تعلیمی بیداری پیدا کرنے میں اہم کردار ادا کیا۔مولانا ابوالکلام آزاد، آصف علی اور سابق وزیراعظم پنڈت جواہر لال نہرومولانا ابوالکلام آزاد، آصف علی اور سابق وزیراعظم پنڈت جواہر لال نہروانہوں نے انجم اسلامیہ سمیت متعدد مدارس کی بنیاد بھی رکھی، اور انگریزی حکومت کے دوران مولانا ابو الکلام آزاد رانچی میں نظر بند رہے۔انھوں نے مزید کہا کہ مولانا کا آزاد کا اصل نام محی الدین احمد تھا جو بڑے ہوکر مولانا ابوالکلام آزاد کے نام سے مشہور ہوئے۔عظیم مجاہد آزادی مولانا آزاد کا جنگ آزادی میں بھی اہم رول تھا اور آزادی کے ساتھ تقسیم ہند کے دوران فرقہ وارانہ کشیدگی کو کم کرنے میں بھی انہوں نے نمایاں کردار ادا کیا۔