بھاجپا کی محبوبہ کو تنبیہ سپریم کورٹ فیصلے کیخلاف لوگوں کونہ اکسائیں:چگ

 عظمیٰ نیوز سروس

سرینگر//بی جے پی کے قومی جنرل سکریٹری ترون چْگ، جو جموں و کشمیر اور لداخ کے پارٹی انچارج بھی ہیں، نے جموں و کشمیر کی سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کو دفعہ 370 کو منسوخ کرنے کے سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف عوامی جذبات بھڑکانے کے خلاف خبردار کیا۔چگ کے مطابق محبوبہ نے کہا کہ سپریم کورٹ کا فیصلہ “خدا کا فیصلہ نہیں ہے”اسلئے محبوبہ بالواسطہ جموں و کشمیر کے لوگوں کو آئینی اداروں کے خلاف اکسانے کی کوشش کر رہی ہے۔انہوںنے کہا کہ کیا وہ یہ آئی ایس آئی فورسز کے کہنے پر کر رہی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ وہ جموں و کشمیر کے لوگوں کو گمراہ کرنے کے لئے اپنے سرپرستوں کی طرف سرحد کے اس پار دیکھنے کے بجائے ہندوستانی قوم پرستی کے بارے میں بات کرنا شروع کریں۔چْگ نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی پالیسیوں اور پروگراموں نے جموں و کشمیر میں ایک نئے باب کا آغاز کیا ہے جس کے بعد سیاحت کو راستہ دینے کے لیے دہشت گردی کو ختم کر دیا گیا ہے۔ لوگ اپنی ترقی اور خوشحالی کی تلاش میں ہیں اور مفتیوں اور عبداللہ خاندانوں کے سیاسی گمراہ کن بیانیے کا شکار ہونے کے لیے تیار نہیں ہیں۔انہوں نے کہا کہ مفتی اور عبداللہ گاندھی کے ساتھ ہاتھ ملانے والے طویل عرصے سے جموں و کشمیر کے لوگوں کو بے وقوف بنا رہے ہیں لیکن اب جوار موڑ چکا ہے اور محبوبہ کی یہ جعلی بیانیہ ان لوگوں میں کام نہیں کرے گی جو امن اور خوشحالی چاہتے ہیں۔