بڑھتے بجلی نرخوں کے باوجود دیرپا ترقی کی روشنی جموں شہرکیلئے 100 میگاواٹ کی روف ٹاپ سولر اَنرجی کی تنصیب

 عظمیٰ نیوز سروس

جموں //کمشنر سیکرٹری سائنس و ٹیکنالوجی سوربھ بھگت نے کل جموں وکشمیر اَنرجی ڈیولپمنٹ ایجنسی (جے کے اِی ڈی اے ) کے زیر اہتمام روف ٹاپ سولر پاور پلانٹس کو فروغ دینے کے لئے منعقدہ کاروباری مواقع سمینار سے خطاب کیا۔ تقریب میں جموں کے دکانداروںنے شرکت کی اور اِس کا مقصد مرکزی حکومت کی گرڈ سے منسلک روف ٹاپ سولر پاور سکیم مرحلہ ۔

 

دوم کی عمل آوری میں بالخصوص جموںوکشمیر کے رہائشی سیکٹرکے لئے تیزی لانا تھا۔کمشنر سیکرٹری نے جے ایند کے اِی ڈی اے کے ذریعے 100 میگاواٹ روف ٹاپ سولر پاور کی تنصیب کے ہدف کو حاصل کرنے کے لئے محکمہ کے عزم کا اِظہار کیا۔بات چیت کا مقصدخوانچہ فروشوںکے ساتھ شراکت داری کو فروغ دینا ہے جس کا مقصد نہ صرف سولر اَنرجی شعبے کو ترقی دینا ہے بلکہ جموں و کشمیر کے نوجوانوں کے لئے روزگار کے مواقع بھی پیدا کرنا ہے۔سوربھ بھگت نے اس سکیم سے 8,000 سے 10,000 روزگار پیدا کرنے کے منصوبے کا خاکہ پیش کیا۔بالخصوص آئی ٹی آئی طلبأ کے لئے جنہوں نے حال ہی میں سوریہ مترا سکل ڈیولپمنٹ پروگرام میں داخلہ لیا ہے۔کمشنر سیکرٹری نے شہریوں کیلئے بجلی کے بلوں میں کمی، روزگار کے مواقع پیدا کرنے اور صاف توانائی کے فروغ سمیت اس سکیم کے وسیع تر فوائد پر زور دیا۔سوربھ بھگت نے جموں شہر میں تقریباً 50,000 گھرانوں میں 100 میگاواٹ کی روف ٹاپ سولر اَنرجی نصب کرنے کے عزم کو اعادہ کرتے ہوئے اِختتام کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ سکیم اپنی پرکشش خصوصیات کے ساتھ اور بجلی کے بڑھتے ہوئے نرخوں کے باوجود خطے کے لئے دیرپا ترقی کی روشنی کے طور پر کھڑی ہے۔