بڈگام کے دیہی علاقوں کی سڑکیں خستہ حال

سرینگر (یو این آئی) وسطی ضلع بڈگام کے دیہی علاقوں کی خستہ حال سڑکوں نے لوگوں کا جینا اس قدر مشکل کر دیا ہے کہ کئی لوگ عارضی طور پر نقل مکانی کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔لوگوں کا کہنا ہے کہ ہماری رابطہ سڑکوں پر اتنے بڑے گڑھے بن گئے ہیں کہ سومو والوں نے سروس بند کر دی ہے کیونکہ انہیں کمائی سے زیادہ نقصان سے ہی دوچار ہونا پڑتا ہے۔ضلع ہیڈکوارٹر سے صرف دس کلو میٹر کی دوری پر واقع پارس آباد کے ایک وفد نے یو این آئی اردو کو بتایا کہ ہماری رابطہ سڑک نے گزشتہ تیس برسوں میں صرف ایک بار میگڈم دیکھا ہے وہ بھی دس برس قبل تب سے اس کی کبھی مرمت بھی نہیں کی گئی۔انہوں نے کہا کہ ہماری رابطہ سڑک پر ایک پل کا تعمیری کام گزشتہ دو برس سے چل رہا ہے لیکن کام کی رفتار کو دیکھ کر لگتا ہے کہ یہ پنج سالہ منصوبہ ہے۔ایک مقامی باشندے بتایا: 'میری عمر چالیس برس ہے، میں نے اپنی اس رابطہ سڑک کو ہمیشہ ایسا ہی دیکھا کہ نالے اس سے بہتر ہیں، ایک بار اس پر میگڈم بچھایا گیا تب سے کسی نے نہیں پوچھا'۔اہلیان پارس آباد نے ضلع مجسٹریٹ بڈگام سے ذاتی طور پر مداخلت کرنے کی اپیل کی ہے تاکہ موجودہ دور میں ان کی رابطہ سڑک بھی سڑک ہی  نظر آئے۔