بڈشاہ پل سے دوشیرہ نے خود کودریابردکیا | کنگن میں نوعمر لڑکے کی خودکشی

کنگن// بڈشاہ پل سرینگر سے ایک لڑکی نے چھلانگ لگاکر اپنی جان دی جبکہ کنگن میں ایک نوعمر لڑکے نے خود کو پھانسی دے کراپنی زندگی کاخاتمہ کیا۔شہرکے سیول لائنز علاقہ میں جمعرات کی سہ پہرتاریخی بڈشاہ پُل سے ایک نابالغ دوشیزہ نے جہلم میں کودکر خودکشی کرلی۔نامعلومات وجوہات کی بناء پردریائے جہلم میں چھلانگ لگاکر جان دینے والی دوشیزہ کی نعش کوبرآمد کرنے کی کوشش جاری ہے ۔جے کے این ایس کے مطابق جمعرات کوسہ پہرکے تقریباً4بجے ایک دوشیزہ نے اچانک بڈشاہ پُل کی باڑھ  پرچڑھ کردریائے جہلم میں چھلانگ لگادی ۔اسبارے میں پولیس تھانہ مائسمہ کواطلاع ملی توپولیس کی ایک ٹیم یہاں پہنچ گئی ۔پولیس ذرائع نے اسکی تصدیق کرتے ہوئے بتایاکہ جہلم میں کودکر خودکشی کرنے والی لڑکی کاتعلق شہر کے ایس ڈی کالونی بتہ مالو سے بتایاجاتاہے اوراسکی عمر16سال بتائی جاتی ہے ۔مائسمہ پولیس تھانہ نے اس واقعے کی مناسبت سے کیس درج کرکے تحقیقات شروع کردی ۔پولیس ذرائع نے بتایاکہ اسبات کی تحقیقات شروع کردی گئی ہے کہ دوشیزہ نے کس بناء پریاکن وجوہات کے تحت یہ انتہائی قدم اُٹھا کراپنی زندگی کاخاتمہ کرڈالا۔پولیس ذرائع نے بتایاکہ جہلم میں کودمیں کرجان دینے والی لڑکی کی نعش کوبرآمد کرنے کی کارروائی جاری ہے ۔ اطلاعات کے مطابق گاندربل ضلع کے سب ڈویژن کنگن کے ریزن گنڈ گائوں میں  14برس کے ارشاداحمد سونتر ولدمحمد یونس سونترنے نامعلوم وجوہات کی بناء پراپنے گھر میں خود کو پھانسی پر لٹکا کرخودکشی کی۔گنڈ پولیس نے لاش کو اپنی تحویل میں لیکر قانونی لوازمات انجام دیئے اور میت کو وارثین کے حوالے کرکے کیس درج کیااور تحقیقات شروع کی۔