بٹھنڈی موڑمسجد و ملحقہ علا قہ میں گندگی کے ڈھیر جمع

جموں //میونسپل حکام کی ناقص کارکردگی کی وجہ سے جموں کے بٹھنڈی موڑ مسجد کے ارد گر د و دیگر علا قوں میں گندگی کے ڈھیر جمع ہیں جس کی وجہ سے مسجد میں جانیوالے  نمازیوں و عام راہگیروں اور مقامی لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا کر نا پڑرہا ہے ۔ایک مقامی شخص مرتضیٰ اکثرکے مطابق سینک کالونی سے لے کر سنجواں کا کچھ ایک علا قہ اور بٹھنڈی بی،بٹھنڈی موڑ ،نواں آباد ،ڈوگیاں ،کریانی تالاب وغیرہ علا قے میونسپل انتظامیہ کے تحت آتے ہیں لیکن اس کے باو جود ادارے کی جانب سے ان علا قوں میں صفائی ستھرائی کیلئے سنجیدگی کا مظاہرہ نہیں کیا جا رہا جس کی وجہ سے عام لو گوں کو دقتوں کا سامنا کر نا پڑرہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ بٹھنڈی موڑ مسجد میں نمازیوں کے علا وہ کشمیر ی درماندہ مسافروں کی ایک بڑی تعداد قیام پذیر ہے لیکن اس کے باوجود بھی مقامی انتظامیہ کی جانب سے صفائی ستھرائی کیلئے کو بھی قدم نہیں اٹھا یا جا رہا  ۔یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ ریاست جموں وکشمیر 2018کو او ڈی ایف کا درجہ دینے کے علا وہ’ سوچھتا ہی سیو ا‘شروع کر دی گئی تھی لیکن اس سب کے باوجود جموں شہر کے کئی ایک علا قے ایسے بھی ہیں جہا ں پر گندگی کے ڈھیر جمع ہو نے سے عام راہگیروں کیلئے چلنا بھی مشکل ہوجا تا ہے۔بٹھنڈی موڑ و ملحقہ علا قوں کی گلیوں کے علا وہ سڑک کے کناروں پر گندگی کے بڑے ڈھیر جمع ہو ئے ہیں جبکہ اس کے ساتھ ساتھ نالیوں کی خستہ حالی کی وجہ سے علا قہ میں بد بو پھیل رہی ہے ۔