بنگلور ٹیسٹ میں انڈیا کی فتح

بنگلور// آف اسپنر روی چندرن اشون (41 رن پر چھ وکٹ) کی گیند بازی کی بدولت ہندوستان نے نشیب و فراز سے پر دوسرے کرکٹ ٹیسٹ کے چوتھے ہی دن منگل کو آسٹریلوی ٹیم کی دوسری اننگز کو جلد سمیٹتے ہوئے 75 رنز سے میچ اپنے نام کر لیا اور سیریز میں 1۔1 کی برابری حاصل کر لی۔ہندستان نے آسٹریلیا کو جیت کیلئے 188 رنز کا ہدف دیا تھا جس کے جواب میں مہمان ٹیم 35.4 اوور میں 112 رنز پر ہی ڈھیر ہو گئی۔اشون نے کمال کی گیند بازی کرکے آسٹریلوی بلے بازوں کو سستے میں نمٹایا اور 12.4 اوور میں 41 رن پر سب سے زیادہ چھ وکٹ نکال کر مہمان ٹیم کو چائے کے وقفہ کے کچھ دیر بعد ہی آؤٹ کر دیا۔ہندستان کی آسٹریلیا کے خلاف اپنے ٹیسٹ تاریخ کی یہ 25 ویں فتح ہے ۔اشون کے علاوہ فاسٹ بولر امیش یادو نے 30 رن پر دو وکٹ، ایشانت شرما نے 28 رن پر ایک وکٹ اور رویندر جڈیجہ نے تین رن پر ایک وکٹ نکالا۔یہ 25 واں موقع ہے جب اشون نے اننگز میں پانچ وکٹ کی کامیابی اپنے نام کی ہے ۔آف اسپنر نے پہلی اننگز میں دو وکٹ نکالے تھے اور میچ میں کل آٹھ وکٹ گراکر سب سے زیادہ کامیاب کھلاڑی ثابت ہوئے ۔ہندوستان نے چتیشور پجارا (92) اور اجنکیا رہانے (52) کی قیمتی نصف سنچریوں سے دوسری اننگز میں 97.1 اوورز میں 274 رنز بنائے جس کی بدولت ہی ہندستان آسٹریلیا کے سامنے 188 رنز کا ہدف رکھ سکا۔ہندستان کی اننگز لنچ تک ختم ہوئی تھی لیکن اس کے بعد ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے آسٹریلوی اننگز ڈیڑھ سیشن کے اندر 35.4 اوور میں 112 رن پر سمٹ گئی۔آسٹریلیا نے چائے کے وقفہ کے بعد محض 11 رن کے وقفے میں اپنے باقی چار وکٹ گنوا دیے ۔ٹیم انڈیا نے اس کے ساتھ ہی چار میچوں کی سیریز میں 1۔1 کی برابری کی اور ناقدین کے منہ بھی بند کر دیے ۔ہندستان نے پنے میں پہلا ٹیسٹ تین دن میں گنوایا تھا اور یہاں اس نے دوسرا ٹیسٹ چار دن کے اندر اندر نمٹا دیا۔تعریف کرنی ہوگی اشون کی جنہوں نے اپنی فارم حاصل کرتے ہوئے چھ وکٹ لے کر کنگارؤوں کو دبوچا۔اشون نے اپنے چھ وکٹ کے کارناموں کے ساتھ سابق تجربہ کار لیفٹ آرم اسپنر بشن سنگھ بیدی کو پیچھے چھوڑ دیا اور ہندستانی ٹیسٹ تاریخ میں پانچویں سب سے زیادہ کامیاب بولر بن گئے ۔ بیدی کے 266 وکٹ تھے جبکہ اشون کے 269 وکٹ ہو گئے ہیں۔میچ کا چوتھا دن ہر لحاظ سے سنسنی خیز رہا جس میں ڈي آرایس کو لے کر خاصا تنازعہ ہوا اور آسٹریلیا کے کپتان اسٹیون اسمتھ ڈي آرایس لینے کے چکر میں اپنے ڈریسنگ روم کی طرف اشارہ کرنے کو لے کر تنازعہ میں آ گئے ۔اسمتھ تیز گیند باز امیش یادو کی گیند پر ایل بی ڈبلیو قرار دیے گئے تھے لیکن وہ اپنے ڈریسنگ روم کی طرف دیکھنے لگے جس کے بعد امپائر نے آ کر انہیں روکا اور پویلین کی طرف جانے کا اشارہ کر دیا۔یہ سراسر قوانین کے خلاف تھا۔اسمتھ نے 28 رنز بنائے اور وہ چوتھے بلے باز کے طور پر 74 کے اسکور پر آؤٹ ہوئے ۔اسمتھ کا آؤٹ ہونا تھا کہ آسٹریلوی اننگز کے خاتمہ ہونے میں زیادہ وقت نہیں لگا۔آسٹریلوی ٹیم دو وکٹ پر 67 کے اسکور پر 112 رنز پر ڈھیر ہو گئی۔آسٹریلیا نے اپنے آخری آٹھ وکٹ 49 رن جوڑ کر گنوائے ۔اشون نے ڈیوڈ وارنر (17)، پیٹر ھیڈاسکمب (24)، مشیل مارش (13)، میتھیو ویڈ (صفر)، مشیل اسٹارک (ایک) اور ناتھن لیون (دو) کو آؤٹ کیا۔امیش نے اسمتھ (28) اور شان مارش (نو) کے وکٹ لئے ۔ایشانت شرما نے اوپنر میٹ رینشا (پانچ) کو آؤٹ کیا جبکہ لیفٹ آرم اسپنر رویندر جڈیجہ نے سٹیو او کیفے (دو) کا وکٹ لیا۔ہندوستان نے لنچ کے بعد کھیلنے اتری آسٹریلوی ٹیم کو ایک کے بعد ایک جھٹکے دیتے ہوئے چائے کے وقفہ تک اس کے چھ وکٹ 101 رن پر نکال دیے ۔آسٹریلوی اننگز کی اچھی شروعات نہیں ہوئی اور وارنر اور رینشا اوپننگ وکٹ کے لئے 22 رن ہی جوڑ سکے ۔