بندشوں میں نرمی کے بعد 8اضلاع میں معمول کی سرگرمیاں بحال، 12میں بدستور نافذ

سرینگر//8اضلاع میں ہفتے کے5دن کورونا کرفیو کے تحت عائد بندشوں میں نرمی کے بعد پیر کو معمول کی سرگرمیاں بحال ہوئیں جبکہ12اضلاع میںصرف پیر اور جمعرات دو دن تک سرگرمیاں بحال رکھنے کی اجازت ہے۔ چیف سیکریٹری، جواسٹیٹ ایگزیکٹو کمیٹی کے چیئرمین بھی ہیں ،کی جانب سے اتوارکی شام لاک ڈائون میں نرمی لانے سے متعلق کچھ ہدایات جاری کی گئیں ،جن کی رو سے لاک ڈائون میں نرمی کااطلا ق جموں وکشمیرکے 8اضلاع پر کیا گیا جن میں شوپیان ،کولگام،گاندربل ،بانڈی پورہ ،پونچھ ،رام بن ،ریاسی اورڈوڈہ  شامل ہیں۔ان اضلاع میں ہفتے کے پانچ دن مکمل طور پر ہر طرح کی سرگرمیاں بحال رہیں گی تاہم سنیچر اور اتوار کو ہفتہ وار کرفیو جاری رہے گا جبکہ باقی12اضلاع میں عوامی نقل وحمل اورکاروباری سرگرمیوں کی اجازت صرف4دن رکھی گئی ہے ،جن میں جموں اورسری نگرشہر بھی شامل ہیں ۔سوموارکی صبح ہفتہ وار لاک ڈائون کے بعدٹنل کے آرپار عوامی نقل وحمل اورکاروباری سرگرمیاں بحال ہوگئیں ،سری نگراورجموں شہروں سمیت جموں وکشمیرکے سبھی20اضلاع میں سوموار کوصبح کے وقت بازار کھل گئے ،تاہم باری باری دکانات کھولنے کی شرط کئی اضلاع میں برقرار ہے جبکہ  علی الصبح نجی گاڑیوں کیساتھ ساتھ مسافر گاڑیاں بھی شاہراہوں ،سڑکوں اورلنک روڑس پررواں دواں نظرآئیں ۔سوموارکی صبح سرینگرسمیت وادی کے تمام دس اضلاع کے ضلعی وتحاصیل صدر مقامات پرواقع بازار کھل گئے اورسبھی اضلاع میں ٹرانسپورٹ سروس بھی بحال رہی ،دن بھربازاروں میں اچھا خاصا رش دیکھاگیاجبکہ سڑکوں پر نجی گاڑیوں کیساتھ ساتھ مسافرگاڑیاں بھی پورے دن بغیرکسی رکائوٹ کے رواں دواں رہیں ۔اس دوران بازاروں میں پولیس اورمیونسپل اداروں کی ٹیمیں بھی تعینات رہیں ،جو ایس ائوپیز پرعمل درآمد پرکڑی نگاہ رکھی ہوئی تھیں ۔اس دوران پولیس نے ایس ائوپیز کی خلاف ورزی کرنے والوں کیخلاف اپنی مہم جاری رکھتے ہوئے متعددافرادسے جرمانہ وصول کرنے کیساتھ ساتھ کچھ گاڑیاں ضبط کیں اورکئی ایف آئی آربھی درج کئے ۔