بمہامہ میں محکمہ جنگلات کا ملازم حملے میں زخمی

کپوارہ +بارہمولہ//  بمہامہ کپوارہ میں محکمہ جنگلات کے ایک ملازم پر حملہ کر کے اس کو شدید زخمی کر دیا گیا۔اس دوران محکمہ جنگلات نے لاکھوں روپے مالیت سے لدی ایک گاڑی ضبط کرلی تاہم ڈرائیوراوراسکاساتھی اندھیرے کافائدہ اُٹھاکرفرارہوگئے ۔کپوارہ قصبہ کے بمہامہ علاقہ میں اس وقت محکمہ جنگلات کے ایک ملازم پر حملہ کر کے اس کو شدید زخمی کر دیا جب علاقہ میں جنگل چوروں کے خلاف محکمہ تلاشی کارروائی میں مصروف تھا۔ محکمہ جنگلا ت کے افسران کا کہنا ہے کہ انہیں ا طلاع ملی تھی کہ کامراج فارسٹ ڈویژن کپوارہ میں چند مرد اپنی خواتین کے ساتھ جنگل جاکر سر سبز درختو ں کو تہہ و تیغ کر کے انہیں بطور بالن استعمال کرتے ہیں۔ محکمہ جنگلات کے ملازمین نے منگل کوبمہامہ علاقہ میں تلاشی کاروائی کے دوران خواتین سے سر سبزچھوٹے چھوٹے درخت پائے اور انہیں ان سے وہ ہتھیار چھین لئے جس سے وہ درختو ں کی کٹائی کرتے تھے ۔ اس دوران وہا ںچند افراد پہنچ گئے اور ملازمین سے کلہاڑیا ں واپس چھین لیں اور ایک فارسٹ گارڈ پر کلہاڑی سے حملہ کر کے شدید زخمی کر دیا جس کے بعد انہیں فوری طور سب ضلع اسپتال کپوارہ میں علاج و معا لجہ کے لئے دا خل کیا گیا۔ڈویژنل فارسٹ آ فیسر کامراج ڈویژن نے کشمیر عظمیٰ کو بتا یا کہ انہو ں نے ان دو نو ں افراد کے خلاف کیس درج کرلیا ہے۔ادھر رینج آفیسررفیع آبادنے عمارتی لکڑی نچلے علاقوں کی جانب اسمگل کئے جانے کی مصدقہ اطلاع ملتے ہی اپنے اہلکاروں اور افسران کے ساتھ ملکرسوموارکورات دیرگئے ناکہ لگادیا۔ اس اچانک کارروائی کے دوران بُڈن نامی گائوں سے ایک ٹپررفیع آبادکے نچلے علاقہ کی طرف آیا۔محکمہ جنگلات کی ٹیم نے جونہی اس گاڑی کورُکنے کااشارہ کیاتواسکاڈرائیوراوراسکاایک ساتھی گاڑی وہیں چھوڑکربھاگ گئے۔ ڈی ایف اورفیع آبادکے مطابق محکمہ جنگلات کی اعلیٰ سطحی ٹیم میں شامل افسروں اوراہلکاروں نے جب ضبط شدہ ٹپرزیرنمبرJK02G-5722کی تلاشی لی تواس میں لاکھوں روپے مالیت کی عمارتی لکڑی پائی گئی ۔جنگلات کی ٹیم نے عمارتی لکڑی سے بھری گاڑی ڈی ایف آفس رفیع آبادپہنچادی جہاں منگل کی صبح جب ضبط شدہ عمارتی لکڑی کی پیمائش کی گئی تواسکی کل پیمائش 49.91مکعب فٹ پائی گئی جسکی مالیت لاکھوں روپے بنتی ہے ۔محکمہ جنگلات رفیع آبادنے فرارہوئے ڈرائیوراوراسمگلروں کیخلاف پولیس تھانہ ڈنگی وچہ میں کیس درج کیا۔