بفلیاز ۔تھنہ منڈ ی ٹنل کی تعمیر زیر غور

 راجوری //ضلع راجوری اور پونچھ کے درمیان مسافت کم ہونے کی امید کی جاسکتی ہے کیونکہ تھنہ منڈی سے بفلیاز تک ٹنل تعمیر کرنے کا امکان پیدا ہواہے ۔ٹنل کی تعمیر کا معاملہ تب سامنے آیاجب ڈپٹی کمشنر راجوری ڈاکٹر شاہد اقبال چوہدری کی قیادت میں ایک میٹنگ منعقد ہوئی جس دوران بی آر او حکام سے اپیل کی گئی کہ وہ اس سلسلے  ڈی پی آر اور فیزیبلٹی رپورٹ تیار کرائیں۔میٹنگ کے دوران کمانڈر بی آر ٹی ایف یو این سنگھ ، کمانڈنگ افسر ستاون آر سی سی پرکاش ورشنے اور ایگزیکٹو انجینئر نیرج کمار نے بتایاکہ بی آراو نے ضلع انتظامیہ کی طرف سے پیش کئے گئے تمام پروجیکٹوں پر پچھلے دو ماہ سے کام میں تیزی لائی ہے اور متعلقین سے کلیئرنس بھی حاصل کی گئی ہے ۔اس موقعہ پر ڈپٹی کمشنر کو یقین دلایاگیاکہ راجوری۔تھنہ منڈی سڑک کے اس سات کلو میٹر حصے پر بھی تارکول بچھانے کاکام بہت جلد شروع ہوگاجو پہلے رہ گیاتھا۔انہیں بتایاگیاکہ یہ کام بہت جلد شروع کرکے اسی سال اکتوبر تک مکمل کیاجائے گاجس سے لوگوں کو کافی زیادہ راحت ملے گی ۔اس موقعہ پر ایک اہم پیشرفت کے طور پر بفلیاز سے تھنہ منڈی تک ٹنل کی تعمیر پر بھی تبادلہ خیال کیاگیا اور بی آراو افسران سے درخواست کی گئی کہ وہ ڈی پی آر اور فیزیبلٹی رپورٹ تیار کرائیں۔اس دوران لوگوںسے اپیل کی گئی کہ وہ سڑکوں کے کنارے کھڑی کی گئی ناجائز تعمیرات خود ہی ہٹادیں تاکہ کام میں خلل نہ ہو ۔قبل ازیں ڈپٹی کمشنر نے ایگزیکٹو انجینئر تعمیرات عامہ ، سی ایم او ، تحصیلدار اور دیگر افسران کے ہمراہ ضلع ہسپتال سے عبداللہ پل تک متبادل سڑک کی تعمیر کرنے کا جائزہ لینے کیلئے خود علاقے کادورہ کیا ۔اس دوران یہ فیصلہ لیاگیاکہ ایک متبادل سڑک جسے بائی پاس سڑک کہاجاتاہے ،کی تعمیر کی جائے گی ۔دریں اثناء ضلع انتظامیہ نے ایک پرپوزل تیار کیاہے جس کے تحت میونسپل حدود میں آنے والی سڑکوں کو محکمہ تعمیرات عامہ کے حوالے کرناہے تاکہ ان کی دیکھ ریکھ بہتر طریقہ سے کی جائے ۔