بصیر خان نے محکمہ سیاحت کی میٹنگ کی صدارت کی

سری نگر//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان نے محکمہ سیاحت کے افسران کو ہدایت دی کہ وہ سیاحوں کیلئے سہولیات میں بہتری لائیں اور جموں و کشمیر ٹورازم ڈیولپمنٹ کارپوریشن کی جائیدادوں سے بہتر آمدنی پیدا کرنے کیلئے اقدامات کریں ۔ یہ ہدایات محکمہ سیاحت کے اثاثوں کی آؤٹ سورسنگ کے سلسلے میں یہاں سول سیکرٹریٹ میں منعقدہ ایک میٹنگ کے دوران دیں ۔ میٹنگ میں سیکرٹری سیاحت ، سیکرٹری قانون ، انصاف اور پارلیمانی امور ، چیف ایگزیکٹو آفیسر جموں و کشمیر اقتصادی تعمیر نو ایجنسی ، ایم ڈی جے کے ٹی ڈی سی ، ڈائریکٹر ٹورازم جموں اور ڈائریکٹر ٹورازم کشمیر شامل تھے۔ میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے مشیر نے افسران کو ہدایت دی کہ وہ مختلف مقامات پر سہولیات کو بہتر بنائیں تا کہ سیاح جموں و کشمیر میں جدید ترین سہولیات اور بہتر کھانوں سے لطف اندوز ہوں ۔ مشیر کو جے کے ٹی ڈی سی کے اثاثوں ، اس کے محصولاتی اڈے اور سیکرٹری سیاحت کے ذریعہ سیاحوں کیلئے دستیاب سہولیات کا تفصیلی اکاؤنٹ دیا گیا ۔ مشیر نے افسران کو ہدایت دی کہ وہ ان اثاثوں کو زیادہ پیداواری اور پُر کشش بنائیں جو سیاحت کے شعبے کو پنپنے کیلئے ان اثاثوں کو عوامی طور پر نجی شراکت کے موڈ کے ذریعہ فائدہ مند طریقے سے استعمال کرنے یا اس کے فزیبلٹی کے مناسب جائیزہ لینے کے بعد آؤٹ سورسنگ کے ذریعے بہتر استعمال کیا جا سکتا ہے ۔ انہوںنے کہا کہ تمام مطلوبہ سہولیات اعلیٰ درجے کی حالت میں ہونی چاہئیں ان تمام سہولیات پر مزید غور کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے جموں اور کشمیر کے دونوں ڈائریکٹروں کو ہدایت دی کہ وہ ان کے بہتر استعمال کیلئے مناسب منصوبہ بنائیں ۔ ادھر  بصیر احمد خان نے کہا کہ حکومت کی کوشش ہے کہ محکمہ ہینڈی کرافٹس کی بنیادی سطح کو مستحکم کیا جائے اور کاریگروں کے معاشی حالات کو بہتر بنانے کیلئے اقدامات کئے جائیں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے یہاں محکمہ ہینڈی کرافٹ اور ہینڈ لوم کے ذریعہ کشمیر ہاٹ میں کے سی سی آئی کے اشتراک سے کاریگروں ، ویوروں اور ہاکروں کیلئے رجسٹرڈ کیمپ کے دوران کیا ۔ دستکاری اور ہینڈ لوم کو معاشی طاقت سے تعبیر کرتے ہوئے مشیر نے دستکاریوں کے فروغ کیلئے کشمیر ہاٹ کے مناسب استعمال پر اور دستکاریوں کو براہ راست اپنی دستکاری کی اشیاء فروخت کرنے کے مواقع فراہم کرنے پر زور دیا اور محکمہ ہینڈی کرافٹس کو ہدایت دی کہ وہ ہاٹ میں باقاعدہ سرگرمیاں منظم کریں ۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ روزانہ پر مبنی پلیٹ فارم اور کاریگروں کو اپنی مصنوعات کی نمائش اور فروخت کرنے کا موقع فراہم کرنا چاہئیے ۔ مشیر بصیر خان نے ڈائریکٹر دستکاری اور ہینڈ لوم کشمیر محمود احمد شاہ کو مشورہ دیا کہ وہ ہاٹ میں نمائشوں کا اہتمام کریں جو کاریگروں کو ریڈی میڈ مارکیٹ مہیاء کرے گی ۔ انہون نے افسران کو ہدایت دی کہ وہ پروگراموں کو پرنٹ میڈیا کے ذریعے عام کریں جو ممکنہ گاہکوں کو راغب کرے اور کاریگروں کی معاشی حالت کو بہتر بنا سکے ۔ مشیر نے کہا کہ ایل جی ذاتی طور پر مقامی فن اور ہُنر کو زندہ کرنے میں گہری دلچسپی لے رہے ہیں اور کاریگروں کی معاشی حالت کو بہتر بنانے کیلئے تمام تر کوششیں کر رہے ہیں ۔ مشیر نے یہ بھی کہا کہ حکومت کاریگروں کو ان کی مصنوعات کیلئے ٹھوس مارکیٹ تیار کرنے میں ہر طرح سے مدد فراہم کرے گی ۔ مشیر نے یہ بھی کہا کہ دیہی علاقوں میں کام کرنے والے نیشنل رورل روزی روٹی مشن کے تحت رجسٹرڈ سیلف ہیلپ گروپ کاریگروں کیلئے ورکنگ سرمایہ کی سہولت فراہم کر سکتے ہیں ۔ مشیر نے کاریگروں سے کہا کہ وہ ایمانداری اور لگن سے کام کریں اور صارفین کا اعتماد حاصل کریں ۔ انہوں نے مناسب سرٹیفکیشن کے ذریعے مصنوعات کے معیار کو یقینی بنانے پر بھی زور دیا ۔ اس دوران بصیر احمد خان نے سول سیکرٹریٹ میں محکمہ فلوریکلچر ، پارکس اور گارڈنز کی ایک میٹنگ کی صدارت کی ۔ میٹنگ میں کمشنر سیکرٹری فلوری کلچر پارکس اینڈ گارڈنز ، ڈائریکٹر فلوریکلچر کشمیر ، ڈائریکٹر پلاننگ فلوریکلچر اور ڈائریکٹر فائنانس فلوریکلچر نے شرکت کی ۔ میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے مشیر نے افسران کو ہدایت دی کہ وہ پارکوں اور باغات کی خوبصورتی میں بہتری لانے کے طریقے اور ذرایع تلاش کریں ۔ میٹنگ کے دوران باغات اور پارکوں کو سیاحوں کیلئے زیادہ دلکش بنانے کیلئے پلانٹ ڈرائیوز ، کلسٹر پلانٹیشن ، ایونیو پلانٹ اور سجاوٹی پودے لگانے سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا ۔ کمشنر فلوریکلچر نے محکمہ میں پیش کی جانے والی سہولیات اور بہتری کے بارے میں مشیر کو تفصیلی بریف کیا ۔ مشیر نے افسران کو ہدایت دی کہ وہ متحرک رہیں اور اس بات کو یقینی بنائیں کہ محکمہ کے زیر انتظام باغات ، پارکوں اور سہولیات کی خوبصورتی کو احتیاط سے نئی قسم کے پودوں اور آرٹ مناظر کی حالت متعارف کروا کر مکمل کیا جائے ۔ انہوں نے جموں و کشمیر میں سیاحت کی اہمیت کو مدِ نظر رکھتے ہوئے موجودہ ضروریات کے مطابق کسی بھی طرح کے اخراجات کو زیادہ نتیجہ خیز اور موافقت بخش بنانے کیلئے مناسب منصوبہ بندی اور فول پروف میکنزم  بنانے کی ضرورت پر زور دیا ۔ کمشنر سیکرٹری فلوریکلچر نے مشیر کو مختلف پارکوں اور باغات کی خوبصورتی سے متعلق آگاہ کیا اور کہا کہ زائرین کیلئے سہولیات میں بہتری لانے کی کوششیں جاری ہیں