برمی مسلمانوں کی حمایت میں کینڈل مارچ

راجوری //برما کے مسلمانوں پر ہورہے ظلم کے خلاف گزشتہ شب راجوری کے نوجوانوں نے کینڈل مارچ نکالا۔ اپنے پیغام میں نوجوانوں نے عالمی برادری کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ انسانی حقوق کی بات کرنے والی تنظیمیں آج کہاں مرگئی ہیں جنہیں برما میں مسلمان معصوم بچوں اور مردوزن کے قتل عام اور ان کی سسکیاں نہیں سنائی دیتی ۔انہوںنے کہاکہ کیا اقوام متحدہ کو صرف مغربی ممالک میں کسی انہونی پر ہی بیانات جاری کرنا اور رونا پیٹنا آتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ تمام مسلم ممالک کو برما کے مسلمانوں کے حق میں کھڑے ہونا ہوگا تاکہ اس  بربریت کاقلع قمع ہوسکے ۔ ان کاکہناتھا کہ مغربی ممالک میں اگر کسی پر کوئی مصیبت آن پڑتی ہے تو پوری دنیا میں شور مچایا جاتا ہے لیکن مسلمانوں پر برما ،شام اور فلسطین سمیت کئی ممالک میں ظلم وزیادتیاں کی جارہی ہیں جن کا نوٹس لینے سے قاصر اقوام متحدہ مجرمانہ خاموشی میں ہے ۔ سماجی کارکن شفقت وانی نے اس موقعہ پر بولتے ہوے کہا کہ حالات اب اس قدر خراب ہوچکے ہیں کہ اگر بین الاقوامی طاقتیں اس کا نوٹس نہیں لیںگی تو اس کے منفی نتائج دیگر ممالک پر بھی پڑ سکتے ہیں ۔ انہوں نے ہندوستان کے حکمرانوں سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ برمی مہاجرین کو ملک بدر نہ کریں بلکہ انہیں پناہ دیں کیونکہ یہ صرف مسلمانوں کا مسئلہ نہیں ہے بلکہ انسانیت کا مسئلہ ہے اوربرمی مہاجرین کو انسا نی بنیادوں پر تحفظ فراہم کیا جائے تاکہ ظلم کے مارے ان مظلوموں کو سہارا مل سکے ۔انہوں نے مسلم ممالک سے بھی اپیل کی کہ وہ برمی مسلمانوں کو اپنے ممالک میں پناہ دیں تاکہ مسلمان ہونے کا حق اداکیا جاسکے ۔