برج کورس کے کا میاب طلباء وطالبات کو مختارعباس نقوی نے اسنادتقسیم کیں

 نئی دہلی// مرکزی اقلیتی امورکے وزیرمختارعباس نقوی نے آج کہاکہ مرکزی حکومت''مدرسوں پرتالا''نہیں بلکہ''فارمل تعلیم کی مالا''چاہتی ہے ۔یہاں وزارت برائے اقلیتی اموراورجامعہ ملیہ اسلامیہ کی جانب سے مشترکہ طورسے مدرسے کے طلباء اوراسکول ڈراپ آؤٹس کے لئے چلائے جارہے ''برج کورس''میں کامیاب طلباء اورطالبات کوسرٹی فکیٹ تقسیم کرتے ہوئے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے کہاکہ وزارت برائے اقلیتی امورکی جانب سے اسکول ڈراپ آؤٹس اورمدارس میں زیرتعلیم طلباء اورطالبات کوتعلیمی طورپربااختیاربنانے کے لئے شروع کی گئی''تھری ٹی'' (ٹیچر، ٹفن، ٹوائیلٹ) مہم کوزبردست کامیابی ملی ہے ۔انہوں نے کہاکہ مرکز کی مودی حکومت کی جانب سے اقلیتوں سمیت سماج کے تمام ضرورت مندوں کوتعلیمی طورپربااختیاربنانے کی سمت میں کی گئی کاوشوں کانتیجہ ہے کہ آج اقلیتی طبقے کے نوجوان مین اسٹریم کی تعلیم حاصل کرکے بہترروزگارکے مواقع حاصل کررہے ہیں۔ مسٹر نقوی نے کہاکہ گزشتہ ایک سال میں پورے ملک میں ہزاروں مدرسوں کو''3ٹی''سے جوڑاگیاہے ۔وزارت اقلیتی امور''3ای'' (ایجوکیشن ،امپلائمنٹ ،امپاورمنٹ)کے عزم کے ساتھ کام کررہی ہے ۔ گزشتہ تقریباً6ماہ کے دوران مدارس سمیت اقلیتی طبقے کے ہزاروں تعلیمی اداروں کو3ٹی''(ٹفن،ٹیچر،ٹوائیلٹ)سے جوڑکرانہیں مین اسٹریم کے تعلیمی نظام میں شامل کیاگیاہے ۔ مسٹر نقوی نے کہاکہ کئی مدرسے فارمل تعلیم کے شعبے میں اچھاکام کررہے ہیں۔ہماری حکومت دیگرمدارس کی بھی حوصلہ افزائی کررہی ہے تاکہ وہ بھی مین اسٹریم کی تعلیم میں شامل ہونے میں اہم کرداراداکرسکیں۔ اقلیتی امور کے وزیر نے کہاکہ ہماری کاوشوں کانتیجہ ہے کہ مسلم لڑکیوں کے اسکول چھوڑنے کی شرح جوپہلے 70-72فیصدتھی،وہ اب تقریباً35فیصدہوگئی ہے ۔ہم اسے صفرفیصدکرناچاہتے ہیں۔ مسٹر نقوی نے کہاکہ گزشتہ 4سالوں میں مختلف اسکالرشپ سے غریب،کمزوراقلیتی طبقے کے 2کروڑ66لاکھ طلباء اورطالبات فیضیاب ہوئے ہیں۔ 'سیکھواور کماؤ'،'استاد'،'غریب نوازمہارت ترقی'،'نئی منزل' وغیرہ کے تحت 5لاکھ 43ہزارنوجوانوں کومہارت ترقی اورروزگارنیزروزگارکے مواقع مہیاکرائے گئے ہیں۔'نئی روشنی'،'بیگم حضرت محل اسکالرشپ' وغیرہ کے تحت 1کروڑ21لاکھ بچیوں اورخواتین کوبااختیاربنایاگیاہے ۔ اقلیتی طبقے کے طلباء اورطالبات،جومختلف اسباب سے اپنی تعلیم جاری نہیں رکھ پاتے اوران طلباء وطالبات کو ،جنہوں نے مدارس سے اپنی تعلیم حاصل کی ہے ،مین اسٹریم سے جوڑنے کے لئے وزارت اقلیتی امورکے مولاناآزادایجوکیشن فاؤنڈیشن نے جامعہ ملیہ اسلامیہ یونیورسٹی کے اشتراک سے تقریباً182طلباء اورطالبات کامیاب ہوئے جنہیں سر ٹیفکیٹ تقسیم کئے گئے ۔ مدارس کومین اسٹریم کے تعلیمی نظام سے جوڑنے کی مہم کے تحت وزارت اقلیتی امورنے مدرسوں کے اساتذہ کے لئے بھی ٹریننگ پروگرام شروع کیاہے ۔بڑی تعدادمیں مدرسوں کے اساتذہ کووزارت اقلیتی امورکی جانب سے جامعہ ملیہ اسلامیہ یونیورسٹی کے ذریعہ منعقدریزیڈینشیل ٹریننگ دی جارہی ہے ۔یہ اساتذہ مختلف مدارس میں مین اسٹریم کی تعلیم جیسے سائنس، ریاضی، کمپیوٹر، ہندی، انگریزی کی تعلیم دے رہے ہیں۔ تقسیم اسناد کی تقریب کے موقع پرمسٹر نقوی کے علاوہ وزارت اقلیتی امورکے سکریٹری اے لوئی کھم،علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے وائس چانسلر طارق منصور،جامعہ ملیہ اسلامیہ یونیورسٹی کے وائس چانسلر طلعت احمد،گروہرکشن پبلک اسکول سوسائٹی کے چیئرمین ایس منجیت سنگھ جی کے ،دہلی ڈائیسس۔چرچ آف نارتھ انڈیاکے نمائندے بشپ کالین تھیوڈور،مہابودھی انٹرنیشنل میڈیٹیشن سینٹرلیہ۔لداخ کے سکریٹری وین ناگ سینا،مولاناآزادایجوکیشن فاؤنڈیشن کے سکریٹری آررحمان اوردیگرمعزز حضرات بھی موجودتھے ۔یو این آئی