بجلی کی خراب صورتحال سے صارفین پریشانی میں مبتلا معیاری سپلائی فراہم کرنے کیلئے انتظامیہ کی مداخلت ضروری :بالی بھگت

 عظمیٰ نیوز سروس

جموں//بجلی کی بے قاعدگی کی وجہ سے پیدا ہوئی خراب صورتحال پر شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے سینئر بی جے پی لیڈر اور سابق وزیر، بالی بھگت نے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا سے مداخلت کی درخواست کی تاکہ بجلی کی قلت سے نمٹنے کے لئے فول پروف حکمت عملی وضع ہو سکے ۔سابق وزیر نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بجلی کی غیر شیڈول کٹوتی روزانہ گھنٹوں کا معمول بن گیا ہے جس کی وجہ سے شدید گرمی میں عوام کی زندگی متاثر ہو کر رہ گئی ہے ۔سابق وزیر نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ عوام کو بجلی کی فراہمی کے باوجود ضرورت سے زیادہ بل وصول کئے جا رہے ہیں۔سینئر بی جے پی لیڈر نے کئی علاقوں میں بجلی کی کٹوتی پر سخت ناراضگی کا اظہار کیا جہاں بجلی محکمہ کی طرف سے باقاعدہ بجلی کی فراہمی کی یقین دہانی کے ساتھ اسمارٹ میٹر لگائے گئے تھے لیکن پھر بھی لوگوں کو بجلی کی غیر مقررہ کٹوتیوں کا سامنا ہے۔بالی بھگت نے کہا کہ جموں و کشمیر یونین ٹیریٹری کے لوگ بجلی کی پیداوار میں بڑے اضافے کی توقع کر رہے ہیں تاکہ اسے دوسری ریاستوں کو فروخت کر کے بھاری ریونیو حاصل کیا جا سکے جس کے نتیجے میں اس مرکز کے زیر انتظام علاقے کے بجلی صارفین بہت معمولی چارجز کی توقع کر رہے ہیں۔انہوں نے ایل جی سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ پاور حکام کو ہدایت کریں کہ وہ بجلی کی غیر مقررہ کٹوتی سے گریز کریں اور بلنگ کے عمل کو ہموار کریں تاکہ بجلی کے صارفین جو زیادہ تر عام لوگ ہیں، کو بڑا ریلیف مل سکے۔