باہوفورٹ ڈیولپمنٹ کمیٹی کا 72 گھنٹے کااحتجاجی دھرنااختتام پذیر

 جموں//باہوفورٹ میں باوے والی ماتاکے مندر کوشرائن بورڈ کے تحت لانے کی مانگ کو لے کر باہوفورٹ ڈیولپمنٹ کمیٹی  کی طرف سے  مہاراجہ ہری سنگھ چوک جموں توی پل پر72 گھنٹے کااحتجاجی دھرنا اختتام پذیرہوگیاہے۔ کمیٹی کے صدر راجیوچاڑک کے مطابق باوے والی ماتاکے مندر کو شرائن بورڈ کے تحت لانے کیلئے متعددبار انتظامیہ سے مطالبہ کیاگیالیکن انتظامیہ نے اس جائزمانگ کوپوراکرنے کیلئے سنجیدگی کامظاہرہ نہیں کیا۔ انہوں نے کہاکہ مندرکوشرائن بورڈ کے تحت نہ لانے کی وجہ سے عقیدتمندوں کونقصان ہورہاہے۔ انہوں نے کہاکہ تمام سابقہ حکومتوں نے یقین دہانی کرائی لیکن اس مانگ کوپورانہیں کیا۔انہوں نے کہاکہ یہاں پر عقیدت مندوں کے ٹھہرنے کیلئے کوئی انتظام نہیں ہے۔انہوں نے کہاکہ  باہوفورٹ ڈیولپمنٹ کمیٹی نے اس مانگ کولے کر 72 گھنٹے کے احتجاجی دھرناشروع کیاتھاجومکمل ہوگیاہے۔انہوں نے کہاکہ احتجاجی دھرناختم کیاگیاہے لیکن جدوجہدجاری رہے گی۔ انہوں نے مزیدکہاکہ اس احتجاج کوکامیاب بنانے کیلئے ہم چیمبرآف کامرس ، کرانتی دل ، شری رام سینا، چاڑک برادری، سریارا سبھا ، بارایسوسی ایشن ، ٹیکسن یونینس، آٹویونینس، ٹرانسپورٹروں ، تاجرتنظیموں کے شکرگذارہیں جنہوں نے اس احتجاجی دھرنے کوکامیاب بنانے کیلئے بھرپورتعاون دیا۔ اس دوران دھرنے میں ڈاکٹر گھمبیر سنگھ، رنکو شرما، یش پال سنگھ چاڑک، موہندرسنگھ، آشادیوی ، کملادیوی، سرجیت سنگھ چاڑک ، پروین سنگھ چب، پریتم شرما، کرنیل چند، خیرسنگھ، ہردیش کھوکھر، راگھومہاجن، اشانت گپتا، اشانت مہاجن، سمیت گپتا ، مانی ، سکھویندرکمار، وکی ودیگران بھی شامل تھے۔