بانہال بارہمولہ ریلوے میں بچھائی جانے والی تانبے کی تار چوری

سرینگر// ریلوے پولیس کشمیر(جی آر پی کے) نے ہفتہ کوریلوے حکام کی طرف سے ایک نجی فرم کے ذریعے نصب کی جا رہی’’ او ایچ ای ‘تانبے کے تار کو لوٹنے میں ملوث 21 ملزمان کو گرفتار کرنے کا دعوی کیا ہے۔سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس ’جی آر پی کے‘، ہرمیت سنگھ نے بتایا کہ 21 ملزمان کو گرفتار کیا گیا ہے جبکہ ان کے پاس سے 388 کلوگرا  ائو ایچ ای تار کی چوری شدہ املاک بھی برآمد کی گئی ہے جس کی مالیت 3لاکھ 56ہزا572 روپے ہے۔ ریلوے حکام آر ایس انفرا پرائیویٹ لمیٹڈ کمپنی کے ذریعے ’ائو ایچ ای‘ تانبے کی تار ستمبر 2021سے بارہمولہ سے بانہال تک بچھا رہی تھی۔ مذکورہ کمپنی کی طرف سے بتایا گیا کہ رات کے اوقات میں نامعلوم چوروں نے یہ وارداتیں کیں۔ ائو ایچ ای تانبے کے تار کی چوری سوپور، پٹن، بڈگام، سرینگر اور بجبہاڑہ علاقوں میں کی گئی۔کمپنی کی تحریری رپورٹ پر کیسوں کا اندراج بارہمولہ،سرینگر اور اننت ناگ میں کر کے تحقیقات شروع کی گئی۔ایس ایس پی ریلوے نے بتایا’’کیس کو حل کرنے کے لیے،  3 الگ الگ ٹیمیں تشکیل دیں گئیں ۔ ٹیموں نے مسلسل کوششوں کے بعد 21 ملزمان کو گرفتار کر کے چوری کے معاملات کو حل کیا۔ انہوں نے کہا او ایچ ای تار 388 کلوگرام، جس کی مالیت 3,56,572 روپے ہے، کی چوری شدہ املاک بھی ان سے برآمد کی گئی۔