بانڈی پورہ میں ڈی ایل آر سی میٹنگ

بانڈی پورہ//ڈپٹی کمشنر بانڈی پورہ ڈاکٹر اویس احمد نے جمعرات کو ضلع کی ایک خصوصی ڈی سی سی اور ڈی ایل آر سی میٹنگ کی صدارت کی تاکہ رواں مالی سال کے لیے ترجیحی شعبوں کی ترقی اور اہداف کا جائزہ لیا جا سکے۔ میٹنگ میں چیئرمین ضلع ترقیاتی کونسل عبدالغنی بٹ، جوائنٹ ڈائریکٹر پلاننگ امتیاز احمد، لیڈ ڈسٹرکٹ منیجر بانڈی پورہ عبدالرشید ملک، اے جی ایم آر بی آئی روچر سونکر، ڈی ڈی ایم نبارڈ ڈاکٹر آصف، گرامین بینک، بارہمولہ سنٹرل کوآپریٹو بینک، پنجاب کے نمائندوں نے شرکت کی۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ ضلع میں ترجیحی شعبے کے تحت 26434 کروڑ روپے اور 179.12کروڑ روپے ترجیحی شعبے کے کل کریڈٹ کے لیے 443.46 کروڑ روپے کے سالانہ ہدف کے مقابلے میں 887.13 کروڑ روپے صرف کئے گئے ہیں۔ افسروں نے بتایا کہ بینکوں نے ترجیحی شعبے میں 34%، غیر ترجیحی شعبے میں 154% کی کامیابی درج کی ہے اس طرح 31دسمبر 2021تک کل سالانہ کریڈٹ پلان میں 50فیصدکی کامیابی ظاہر ہوئی ہے۔ لیڈ ڈسٹرکٹ مینیجر بانڈی پورہ عبدالرشید ملک نے بتایا کہ اکیلے جے اینڈ کے بینک نے ترجیحی شعبے کے تحت 196.28 کروڑ روپے اور غیر ترجیحی شعبے کے تحت 166.45 کروڑ روپے تقسیم کیے ہیں جو کہ 444.23کروڑ کے سالانہ ہدف کے مقابلے میں مجموعی طور پر 362.73 کروڑ روپے کے قرضے پر مشتمل ہے۔سی سی اور ڈی ایل آر سی کے چیئرمین نے ضلع کے ہر بینک کی کارکردگی کا جائزہ لیا اور انہیں ہدایت کی کہ وہ اہداف کو جلد از جلد پورا کریں اور مقدمات کو ترجیحی بنیادوں پر کارروائی کریں۔ انہوں نے متعلقہ لوگوں سے کہا کہ وہ سماجی تحفظ کی اسکیموں اور کریڈٹ کی سہولت کو ترجیح دینے کے ساتھ ساتھ حکومت کو تیزی سے نمٹانے پر زور دیں۔انہوں نے تمام بینکوں اور اسپانسرنگ ایجنسیوں کو نصیحت کی کہ وہ ترقیاتی پیشرفت اور بے روزگاری کے خاتمے کے اہداف اور اہداف کے حصول کے لیے ہم آہنگی اور ہم آہنگی سے کام کریں۔