بانڈی پورہ میں اے سی بی کی کارروائی

بانڈی پورہ // انسداد بدعنوانی بیورو (ACB)نے پیر کو محکمہ دہی ترقی بانڈی پورہ کے ایک بلاک میںٹیکنکل اسسٹنٹ سمیت 2ملازمین کو مبینہ طور پر ایک ٹھیکیدار سے رشوت طلب اور وصول کرنے کے الزام میں گرفتار کیا۔اینٹی کرپشن بیورو نے شوکت احمد لون ٹیکنیکل اسسٹنٹ اور عرفان یوسف بٹ (ٹاؤٹ) کو رورل ڈیولپمنٹ ڈیپارٹمنٹ بلاک آرین میں ایک ٹھیکیدار سے بلوں کی تیاری کے لیے 18000 روپے رشوت مانگنے اور قبول کرنے کے الزام میں گرفتار کیا۔بیورو کے بیان میں کہا گیا ہے کہ"ACB کو ایک شکایت موصول ہوئی جس میں شکایت کنندہ نے کہا کہ انہیں کام کا الاٹمنٹ ملی تھی ،جسے مکمل کیا گیا اور اب بل تیار کیے جانے تھے۔ مذکورہ ملازمین شکایت کنندہ کے کام کے بل تیار کرنے کے لیے 18000 روپے کا مطالبہ کر رہا تھے۔فوری طور پر شکایت موصول ہونے پر، بدعنوانی کی روک تھام ایکٹ 1988 کے U/s 7 کے تحت پہلی نظر میں جرم کا پتہ چلا۔ "نتیجتاً،  ایک مقدمہ درج کیا گیا اور تحقیقات کے دوران جانچ شروع کی گئی۔ راشی ملازمین کیخلاف ایک خصوصی ٹیم کے ذریعہ کامیاب جال بچھا کر ٹیکنیکل اسسٹنٹ شوکت احمد اور اسکے ساتھی عرفان یوسف کو 18ہزار روپے رشوت کی رقم کا مطالبہ کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑ لیا۔ دونوں کو گرفتار کیا گیا اور اے سی بی ٹیم نے اپنی تحویل میں لے لیا۔"رشوت کی رقم بھی آزاد گواہوں کی موجودگی میں ان کے قبضے سے برآمد کی گئی تھی اور کیس کی مزید تفتیش جاری ہے۔