بارہمولہ کے بیشتر علاقے پینے کے صاف پانی سے محروم

 
بارہمولہ //ضلع بارہمولہ کے بیشتر علاقوں کے لوگ پینے کے صاف پانی کی ایک ایک بوند بوند کیلئے ترس رہے ہیں۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ محکمہ پی ایچ ای اُنہیںپینے کا صاف پانی فراہم کرنے میں پوری طرح سے ناکام ہوچکا ہے جس کی وجہ سے مقامی آبادی کو سخت مشکلات درپیش ہیں ۔ بارہمولہ کے کئی علاقے جن میںسعید پورہ رفیع آباد ،حاجی بل ،نارواو ،پٹن ،ٹنگمرگ اور اوڑی کے علاوہ کئی علاقوں کے لوگوں نے محکمہ پی ایچ ای حکام پر غفلت شعاری اور لاپرواہی کا الزام لگاتے ہوئے کہ محکمہ ہذا کی عدم توجہی سے پانی کی سپلائی بُری طرح سے متاثر ہوتی ہے اور لوگ پانی کی ایک ایک بوند کو ترستے ہیں جبکہ لوگ گندے نالوں اور دریائوںکا پانی پینے پر مجبور ہو جاتے ہیں، جس سے بیماریاں پھوٹ پڑنے کا خطرہ لاحق ہے۔ عبدالغفار نامی ایک شہری نے کشمیر عظمیٰ کوبتایا کہ محکمہ پی ایچ ای کی طرف سے اگرچہ کئی سکیموں پرکام شروع کیا گیا تھا لیکن نامعلوم وجوہات کی بنا پر اُس کام کو ادھورا رکھا گیا ہے جس سے ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی کو 21 ویں صدی میں بھی پینے کا صاف پانی میسر نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ کئی جگہوں پر پہلے ہی واٹر سپلائی سکیمیں موجود ہیں۔لوگوں نے گورنر انتظامیہ اور محکمہ پی ایچ ای سے مطالبہ کیا کہ وہ زمینی سطح پر صورتحال کا جائیزہ لیکر ان علاقوں کیلئے پینے کے صاف پانی کی خاطر اقدامات کریں بصورت دیگر عوام سڑکوں پر آنے کیلئے مجبور ہونگے ۔