بارشیں ، تیز آندھی اور شدید ژالہ باری

سرینگر//کچھ دن تک گرمی پڑنے کے بعدجمعرات کی شام موسمی صورتحال اچانک تبدیل ہوئی اور شہر سرینگر میں کالے بادل چھا گئے اور تیز ہوائیں چلیں۔آندھی چلنے کا سلسلہ قریب آدھے گھنٹے تک جاری رہا اور تیز ہوائوں کی رفتار اس قدر زیادہ تھی کہ لوگ گھروں میں سہم کر رہ گئے۔زبردست آندھی چلنے سے 33اور11KV ٹرانسمیشن لائنوں کو شدید نقصان پہنچا اور وادی میں برقی رو منقطع ہوگئی۔محکمہ بجلی کا کہنا ہے کہ تیز آندھی چلنے سے درجنوں مقامات پر بجلی کے کھمبے اور درخت  اکھڑ گئے جس کے نتیجے میں بجلی سپلائی شدید متاثر ہوئی۔تیز آندھی چلنے کے بعد بجلی چمکیں اور اسکے ساتھ ہی گرج چمک کیساتھ بارش کا آغاز ہوا۔ رات کے قریب 12بجے تک یہ سلسلہ جاری رہا۔اطلاعات میں کہا گیا ہے کہ شہر سرینگر میں اس کی شدت سب سے زیادہ رہی تاہم دیگر اضلاع میں معمولی بارشیں ہوئی اور آندھی نہیں چلی۔ محکمہ موسمیات کے مطابق اگلے چوبیس گھنٹوں کے دورن وادی کشمیر میں مزید بارشیں ہونے کے امکانات ہیں۔جنوبی کشمیر کے کئی علاقوں میں تیز آندھی ، بادل پھٹنے اور بجلی کڑکنے کے واقعات رونما ہونے کے بعد لوگ گھروں میں سہم کر دہ گئے ۔ شمالی ضلع بارہمولہ کے کئی مقامات پر زبردست ژالہ باری کے نتیجے میں کھڑی فصلوں اور سیب کو بڑے پیمانے پر نقصان پہنچا ۔