بارسو گاندربل میں محکمہ بجلی کے خلاف دھرنا

گاندربل+ترال//گاندربل کے تمبری محلہ کرہامہ نے بارسو چوک میںمحکمہ بجلی کے خلاف دھرنا دیکر ٹریفک کی نقل و حرکت مسدود کردی ۔احتجاجی مظاہرین نے کہا کہ گذشتہ 22روز سے اُن کے محلہ میں نصب ٹرانسفارمر کو ٹھیک کرکے واپس نہیں لایا جارہا ہے۔مظاہریں میںشامل عبدالحمید نامی ایک شہری نے بتایا کہ محلہ میں نصب ٹرانسفارمر 22 روز پہلے خراب ہوا  جسے ٹھیک کرنے کے لئے ورکشاپ لے جایا گیا لیکن واپس لانے میں لیت و لعل کیا جارہا ہے ۔مذکورہ شہری کے مطابق انہیں احتجاجی راستہ اپنانے پر مجبور کیا گیا۔اس دوران نائب تحصیلدار لار نے احتجاج میں شامل افراد کو یقین دہانی لایا جس کے بعد دھرنا ختم کیا گیا ۔ادھر ترال کے نازنین پورہ گائوںکی آبادی گزشتہ2ماہ سے بجلی سپلائی سے محروم ہے جس کے نتیجے میں مقامی آبادی کو طرح طرح کے مشکلات کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے ۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ انہوںنے ٹرانسفار مر کی مرمت کیلئے2ماہ کے دوران7بار گھر گھر چند جمع کر کے  مرمت کروائی لیکن جب ٹرانسفارمر نصب کیاجاتا ہے تو وہ فوری طورپھر خراب ہوجاتا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ محکمہ کے اہلکا ر اس قدر سنجیدہ ہیں کہ علاقے میںنصب ٹرانسفارمر میں کوئی خرابی نہیں بلکہ ترسیلی لائین میں کوئی خرابی تھی جس کی وجہ سے ٹرانسفار مرخراب ہوجاتا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس صورتحال سے متعلقہ اہلکاروں کو آگاہ کیا گیالیکن انہوں نے ایک بھی نہیں سنی اور گزشتہ شام بجلی ٹرانسفار مر کو نصب کیا جہاں وہ دوبارہ خراب ہوگیا جبکہ کئی لوگوں کے گھروں میں الکٹرانک سازوسامان بھی جل گیا ۔اس دوران محکمہ بجلی کے خلاف زوردار احتجاج کر کے ترال ڈاڈسرہ سڑک پر احتجاجی دھرنا دیا ۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ علاقے میں گزشتہ کئی ہفتوں سے بجلی کی آنکھ مچولی میں زبردست اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے جس کے نتیجے میں علاقے کی آبادی سردی کے ان سخت ایام میں سخت مشکلات درپیش ہیں ۔دریں اثناء وسطی ضلع بڈگام کے دور افتادہ علاقے برنوار میں لوگوں کو بجلی کی عدم دستیابی کے باعث شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ مقامی آبادی نے جمعہ کو صبح سڑکوں پر نکل کر بجلی کی عدم دستیابی کے خلاف زوردار احتجاج کیا۔ اس دوران مقامی لوگوں نے بتایا کہ محکمہ بجلی نے یہ کہہ کراُن کے 2ماہ ضائع کئے کہ علاقے کیلئے بجلی ٹرانسفار مر فراہم کیا جائے گاتاہم2ماہ گزر نے کے باوجود ٹرانسفارمر نصب نہیں ہوا۔