اے ٹی ایم سے رقم نکالنے کی فیس

سرینگر// مرکزی حکومت نے یکم اکتوبر سے بھارتیہ ڈاک اور دیگر بنکوں کے ’’اے ٹی ایم‘ لین دین سے متعلق قیمت ادا کرنے پڑے گی۔ اے ٹی ایم میں رقومات کی حصولیابی پر قیمت ادا کرنے کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ دوسرے’اے ٹی ایموں‘‘ پر میٹرو شہروں میں3 اور غیر میٹروں شہروں میں5مفت لین دین کے بعد20روپے اور جی ایس ٹی ادا کرنا ہوگا،جبکہ اپنے (بنکوں) کے اے ٹی ایموں پر5مفت لین دین کے بعد10روپے اور جی ایس ٹی کی ادائیگی کرنی ہوگی۔ دوسرے اے ٹی ایموں پر میٹرو شہروں میں3 اور غیر میٹروں شہروں میں5مفت غیر مالیاتی لین دین  کے بعد8روپے اور جی ایس ٹی ادا کرنا ہوگا۔ اے ٹی ایم و ڈیبٹ کارڈوں میں سالانہ دیکھ ریکھ چارجز کے میں مد میں125روپے ادا کرنے ہونگے اور اس کا اطلاق یکم اکتوبر2021سے30ستمبر2022کے دوران کیا جائے گا۔ مزید کہا گیا ہے کہ ڈیبٹ کارڈوں میں ایس ایم ایس الرٹ سالانہ چارجز میں12روپے ادا کرنے ہونگے۔ڈیبٹ کارڈر کی تبدیلی کیلئے جی ایس ٹی کے علاوہ300روپے، پی آئی این اور شاخ کے ذریعے پی آئی این رجسٹریشن کی نقل کیلئے50روپے اور جی ایس ٹی اور اے ٹی ایم،پی ائو ایس لین دین  کے دوران کھاتے میں کم جمع پونجھی پر20روپے و جی ایس ٹی ادا کرنا ہوگا۔