اے بی وی پی کے بینر تلے طلاب کا احتجاج

جموں// اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشد(اے بی وی پی)کے بینر تلے جموں میں طلبہ وطالبات نے کلسٹر یونیورسٹی جموں کے تحت کالجوں میں شبانہ کلاسز شروع کرنے اور مختلف کورسز کی نشستیں بڑھانے کے لئے سلسلہ وار بھوک ہڑتال شروع کی ہے جوکہ پیر کے روز چوتھے روز بھی جاری رہی۔جنم اشٹمی کے موقع پر بھی طلبہ وطالبات نے وائس چانسلر دفتر کے باہر دھرنا دیا۔ احتجاج کر رہے طلاب نے ہاتھوں میں پلے کارڈز بھی اٹھارکھے تھے جن پرشبانہ کلاسز شروع کرنے کا مطالبہ درج تھا۔ششماہی امتحانات میں کامیاب ہوئے12ویں کلاس کے طلبہ بھوک ہڑتال پر بیٹھے ہیں جنہیں کسی بھی کالج میں داخلہ نہیں ملا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ کلسٹر یونیورسٹی جموں کے تحت کالجوں میں نشستیں مخصوص رکھی گئی ہیں جوکہ پرہوچکی ہیں، طلبہ وطالبات کی تعداد دن بدن بڑھتی جارہی ہے،ہزاروں کی تعداد میں طلاب کوگریجویشن میں داخلہ نہیں مل پایا ہے جس سے وہ ذہنی طور پریشان حال ہیں، اس لئے شبانہ کلاسزبھی شروع کی جائیں تاکہ ایسے سبھی طلاب کو داخلہ مل سکے۔ ان کا کہنا ہے جب تک مانگ پوری نہیں ہوتی احتجاج جاری رہے گا۔ بتایں دیں کہ رواں تعلیمی سال سے کلسٹر یونیورسٹی جموں جس کے تحت پانچ کالج آتے ہیں، میں مختلف مضامین میں انڈگریجویٹ انٹی گریٹیڈکورسز کے لئے نشستیں مخصوص رکھی گئی ہیں۔ کلسٹر یونیورسٹی میں جون10سے داخلہ عمل شروع ہوا تھا، جوکہ اب مکمل ہوچکا ہے لیکن بائی اینول امتحان کے تحت 12ویں کلاس کامیاب ہوئے امیدوار وں کے لئے ابھی داخلہ کی تاریخ ہے، مگرنشستیں پہلے ہی پرہوچکی ہیں۔ کلسٹر یونیورسٹی جموں کے ڈئین سٹوڈنٹس ویلفیئر ٹوینکل سوری نے بتایاکہ گذشتہ برس نشستیں مخصوص کرنی تھیں لیکن ایسا ہونہیں سکاتھا، اس لئے امسال سے یہ عمل متعارف کیاگیاہے۔ انہوں نے بتایاکہ یہ فیصلہ اس لئے لیاگیاہے تاکہ کلاسز میں زیادہ ہجوم نہ ہو۔کلسٹر یونیورسٹی جموں مرکزی مالی معاونت والی اسکیم راشٹریہ اوچاچھتر شکشا ابھیان(روسا)کے تحت قائم کی گئی ہے جس کو سال 2013میں مرکزی وزار ت برائے انسانی وسائل نے لانچ کیاتھا۔ کلسٹر یونیورسٹی کے تحت جی جی ایم سائنس کالج، گورنمنٹ ایم اے ایم کالج، ایس پی ایم آر کالج آف کامرس، گورنمنٹ خواتین کالج گاندھی نگر اورگورنمنٹ کالج آف ایجوکیشن کنال روڈ جموں شامل ہیں جن میں جی جی ایم سائنس کالج یونیورسٹی کالیڈ کالج ہے۔یو این آئی