اے آئی ایس ایف ڈوڈہ نے شہیدی دیوس منایا

 ڈوڈہ//آل انڈیا سٹوڈنٹس فیڈریشن (اے آئی ایس ایف) ضلع اکائی ڈوڈہ نے 23 مارچ 1931 کو جد وجہد آزادی کے دوران ملک کے لئے  اپنی جانیں قربان کرنے والے مجاہد آزادی بھگت سنگھ، شیورام راج گرو اور سکھ دیو تھاپر کا 91 واں شہیدی دیوس منایا۔ فیڈریشن نے ٹاؤن ہال ڈوڈہ میں مختلف اسکولوں کے طلبہ کے لیے ایک پینٹنگ مقابلہ اور سمپوزیم کا بھی انعقاد کیا، جس میںسکول کے طلاب نے بڑی تعداد میں حصہ لیا۔اس دوران مقابلے میں نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والوں کی حوصلہ افزائی کی گئی۔ پروگرام کا آغاز مجاہد آزادی کو پھولوں کے خراج عقیدت اور "بھگت سنگھ امر رہے"، "بھگت سنگھ تیرے خوابوں کی  منزل تک پہنچے گا" جیسے نعروں سے ہوا۔جبکہ راج کمار اور ورشا دھر نے خطبہ استقبالیہ پیش کیا۔ اس موقع پر ڈگری کالج ڈوڈہ کی پروفیسر انیتا کوتوال مہمان خصوصی تھیں۔ تقریب میں شامل دیگر مہمانوں میں ڈاکٹر حامد پڑے، جگنو، محمد اصغر بٹ، اور محمد صادق شامل ہیں۔فیڈریشن کے ضلع صدر ڈوڈہ سلیندر پریہار سرازی نے تنظیم کے کام کاج پر مشتمل ایک خاکہ پیش کیا۔ ساتھ ہی عبوری ضلع اکائی نظم کا اعلان کیا گیااور سلیندر پریہار سرازی کو دی گئی تمام ذمہ داریوں سے فارغ کر دیا گیا۔ مقررین کی بڑی تعداد نے بھگت سنگھ، شیورام راجگرو اور سکھ دیو تھاپر کی زندگی، جدوجہد اور نظریہ کے بارے میں بھی بات کی۔ مہمان خصوصی نے اپنے خطاب میں جدوجہد آزادی اور معاصر ہندوستان کے دوران بھگت سنگھ کے کردار اور ان کے نظریہ پر روشنی ڈالی۔ پینٹنگ مقابلے میں ہرویندر سنگھ کو پہلا دھیرج گوریا اور سبھا نے بالترتیب دوسرا اور تیسرا مقام حاصل کیا۔ اس دوران سیمینار میں میناکشی گوریا نے پہلی، سونیا شرما اور انش راجپوت نے دوسری اور تیسری پوزیشن حاصل کی۔ پروگرام کا اختتام ڈمپل پریہار انچارج صدر بوائز ہائر سیکنڈری اسکول ڈوڈہ کے رسمی شکریہ کے ساتھ ہوا۔