این آئی اے کی کارروائی اںعوام کو مرعوب کرنے کی کوشش:لبریشن فرنٹ

سرینگر//لبریشن فرنٹ نے این آئی اے کارروائیوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ دھونس دبائو اور دھمکیوں سے تحریک آزادی کو دبانا ممکن نہیں ہے ۔موصولہ بیان کے مطابق لبریشن فرنٹ کے سینئر نائب چیئرمین عبدالحمید بٹ منگل کو فرنٹ کے مرکزی قائدین کے ایک اجلاس سے خطاب کررہے تھے۔انہوں نے کہا کہ این آئی اے کو استعمال کرکے مزاحمتی قیادت اور کشمیریوں کو شکست دینے کی سوچ رکھنے والے بھارتی حکمران جان لیں کہ اُن کے یہ خواب کبھی بھی شرمندہ ٔ تعبیر نہیں ہوں گے۔ اجلاس میں پارٹی چیئرمین محمد یاسین ملک کی گرفتاری اورپبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت انہیں جموں کے کوٹ بلوال جیل میں قید تنہائی کا شکار بنانے ، میر واعظ محمد عمر فاروق اور سید نسیم گیلانی کی این آئی اے کے ذریعے دہلی طلبی اورحالیہ انتقامی چھاپہ مارکارروائیوں ، گرفتاریوں کے لا متناہی چکر، جماعت اسلامی جموں کشمیر جیسی مقتدر دینی و سماجی تنظیم پر پابندی اور وادی کے طول و عرض میں جاری فوج،پولیس اور فورسز کے ظلم وجبر جیسے معاملات پر شدید ردعمل کا اظہار کیا گیا ۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے بٹ نے کہا کہ جیل اور تختہ دار کشمیریوں کے لئے کوئی نئی بات نہیں ہے،کیونکہ پچھلے 70برس سے زائد عرصے کے دوران کشمیری ظلم و جبر برداشت کرتے چلے آر ہے ہیں لیکن تاریخ کے کسی دور میں بھی کشمیریوں نے سرنگوں ہوکرتسلط کو قبول نہیں کیا۔ انہوں نے این آئی اے کے حالیہ چھاپوں اور مزاحمتی قائد میر واعظ محمد عمر فاروق سمیت دوسرے لوگوں کی دہلی طلبی کو انتقام گیری پر مبنی کاروائی قرار دیا۔