ایشیا کپ 2023|پی سی بی ٹیم انڈیا کی شرکت کیلئے پُرامید

 کراچی /پاکستان کرکٹ بورڈ دو سال بعد ایشیا کپ پاکستان میں کرانے اور بھارتی ٹیم کی بھی شرکت کیلئے پرامید ہے۔ بورڈ چیئرمین احسان مانی کا کہنا ہے کہ 2022 میں ایشیا کپ سر ی لنکا کرائے گا۔2023میں پاکستان کو ایشیا کپ کرانا ہے، امید ہے اس وقت تک سیاسی حالات میں بہتر ی آجائے گی۔ حال ہی میں کچھ پیش رفت کے نتیجے میں دونوں ملکوں کے درمیان برف پگھلنا شروع ہوگئی ہے۔ بھارت کی ٹورنامنٹ میں شرکت پاکستان کرکٹ کےلئے بڑا بریک تھرو ہوگا۔ منگل کو جنگ کو خصوصی انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ پاکستان کے پاس اس سال وقت نہیں ہے اس لئے ایشیا کپ ہونے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ جون میں چھوٹی سی ونڈو تھی اس میں ہم پاکستان سپر لیگ کے بقیہ میچ کرارہے ہیں۔ بھارتی ٹیم نیوزی لینڈ کے خلاف ٹیسٹ چمپئن شپ کا فائنل کھیلے گی۔ اسے دو ہفتے پہلے انگلینڈ جاکر قرنطینہ میں رہنا ہوگا اس لئے بھارتی ٹیم بھی مصروف ہے۔ سنا ہے بھارت ایشیا کپ میں اپنی بی ٹیم بھیج رہا ہے لیکن ہم سے اس بارے میں کوئی بات نہیں کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایشیا کپ سے ہونے والی آمدنی سے ایسوسی ایٹ ملکوں کو کرکٹ کے فروغ کے لئے پیسہ ملتا ہے۔ اس لئے اگر تمام ٹیمیں حصہ لیں تو ایشین کرکٹ کونسل کو معقول آمدنی ہوگی۔ احسان مانی نے کہا کہ انٹر نیشنل کرکٹ کونسل نے یقین دلایا ہے کہ ٹوئنٹی 20ورلڈ کپ میں شرکت پاکستان کا حق ہے اور اصولی طور پر یہ طے ہوگیا ہے کہ یہ ٹورنامنٹ پاکستان کے بغیر نہیں ہوگا۔ اس سلسلے میں آئی سی سی کے چیئرمین گریگ بارکلے سے تین چار بار رابطہ ہوا ہے۔31مارچ اور یکم اپریل کو آئی سی سی میٹنگ میں بھارتی کرکٹ بورڈ پاکستان کے کھلاڑیوں، صحافیوں اور تماشائیوں کے ویزوں اور سیکیورٹی معاملات پر حتمی جواب دے گا ۔ ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ آئی سی سی کے چیئرمین بارکلے پاکستان کے معاملے کو براہ راست دیکھ رہے ہیں، اس لیے آئی سی سی کے سی ای او مانو سواہنی کے جانے سے کوئی فرق نہیں پڑے گا۔ احسان مانی نے کہا اس وقت سب سے بڑا مسئلہ بھارت میں کورونا وائرس کا دوبارہ زور پکڑ لینا ہے بھارت اور انگلینڈ کا ٹی ٹوئنٹی تماشائیوں کے بغیر ہوا۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ بھارت میں اس سال یہ ٹورنامنٹ ہو بھی سکتا ہے یا نہیں، گذشتہ سال ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ ملتوی ہوچکا ہے اگر یہ ٹورنامنٹ اس سال بھی نہیں ہوا تو آئی سی سی کا سائیکل2024تک ایک سال آگے چلا جائے گا ۔