ایس آر او520ہی حرف آخر نہیں:کیجول ڈیلی ویجر فورم

 سرینگر// حکومت کی طرف سے عارضی ملازمین کو مستقل کرنے سے متعلق جاری کیں گئے ایس آر ائو 520کو مشروط قرار دیتے ہوئے روزانہ اجرت پر کام کرنے والے ملازمین کے مشترکہ اتحاد کیجول ڈیلی ویجر فورم نے  اس بات کی وضاحت کی کہ ایس آر اومیں کمیوں کو پورا کرنے کیلئے سرکار معاہدہ بند ہے۔سرینگر میں جمعہ کو پریس کانفرنس کے دوران کیجول،ڈیلی ویجر فورم کے چیئرمین سجاد احمد پرے نے کہا کہ عارضی ملازمین کی مستقلی کیلئے جو ایس آر ائو اجراء کیا گیا ہے،وہ حرف آخر نہیں بلکہ اس میں کمیوں کو پورا کرنے کیلئے وقت وقت پر مزید ایس آر ائو جاری ہوتے رہیں گے۔انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں وزیر خزانہ کے ساتھ انہوں نے معاہدہ کیا ہے۔سجاد احمد پرے نے مزید کہا’’ دوران ڈیوٹی جن عارضی ملازمین کی موت واقع ہوئی،ان ملازمین کیلئے بھی علیحدہ ایس آر ائو جاری ہوگا،اور سرکار اس کیلئے واعدہ بند ہے‘‘،تاہم ناہون نے روزانہ اجرتوں پر کام کر رہے ملازمین کی دیرینہ مانگ کو پورا کرنے کیلئے مخلوط سرکار کی سراہنا کی۔انہوں نے کہا کہ ابھی مستقلی عمل کی شرعات ہے،جبکہ مستقبل قریب میں مستقلی پالیسی کے حوالے سے اور بھی ایس آر ائو جاری ہونگے،وہ ان ملازمین کو وہی مراعات دئیے جائے گے،جو درجہ چہارم کے ملازمین کو دئیے جاتے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ معاہدہ کے مطابق ہی ایس آر ائو520میں اس بات کو درج کیا گیا ہے کہ تمام ترامیم کرنے کا اختیار محکمہ خزانہ کو ہوگا،جو کہ اپنی سطح پر ضرورت پڑنے پر اس ایس آر ائو میں ترامیم عمل میں لاسکتے ہیں۔ سجاد احمد پرے نے ایک بار پھر کہا کہ سرکار نے60ہزار ملازمین کو مستقل کر کے تاریخی فیصلہ لیا،تاہم جب ان سے پوچھا گیا کہ سرکاری اعداد شمار اور کیجول و ڈیلی ویجر فورم کے اعداد شمار میں اس قدر تضاد کیوں ہیں،تو انہوں نے کہا کہ وہ اپنے اپنے محکموں میں اس بات کا خیال رکھے گئے،کہ کسی  بھی شخص کو چور دروازے سے تعینات نہ کیا جائے۔