اہم خبریں

فرصل کولگام میں حادثاتی فائر
گولی فوجی اہلکارکی اُنگلی میں جالگی
خالد جاوید
کولگام / کولگام ضلع کے فرصل قصبہ میں بدھ کے روز اتفاقیہ طور پر گولی چلنے سے ایک اہلکار زخمی ہوا۔ پولیس نے بتایا کہ فرصل کولگام میں دوران ڈیوٹی ایک فوجی اہلکار کی سروس رائفل گرنے سے اچانک گولی نکلی ،جو ایک فوجی جوان کو انگلی میںجا لگی۔ فوجی جوان کو فوری طور پر علاج کیلئے قریبی اسپتال منتقل کیا گیا۔

رئیل ایسٹیٹ ریگولیشن اینڈڈیولپمنٹ اتھارٹی
سابق آئی اے ایس افسرپری مل رائے چیئرمین نامزد

بلال فرقانی
سرینگر// سرکار نے رئیل سٹیٹ ریگولیشن اینڈ ڈیولپمنٹ اتھارٹی کیلئے سبکدوش آئی ائے ایس افسر پرئمل رائے کو چیئرمین نامزد کیا۔ محکمہ مکانات و شہری ترقی کے پرنسپل سیکریٹری دھیرج گپتا کی طرف سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق ریئل اسٹیٹ (ریگولیشن اینڈ ڈیولپمنٹ) ایکٹ مجریہ2016 کے دفعہ22 کے ذریعے عطا کردہ اختیارات کے تحت، جموں و کشمیر کی حکومت نے ریٹائرڈ آئی اے ایس افسر پریمل رائے کو جموں و کشمیر ریئل اسٹیٹ ریگولیشن اینڈ ڈیولپمنٹ اتھارٹی کا چیئرپرسن مقرر کیا۔ نوٹیفکیشن میں مزید کہاگیا ہے کہ چیئرپرسن کی تقرری اس تاریخ سے عمل میں آئے گی جب وہ اتھارٹی میں عہدے کا چارج سنبھالے گا۔نوٹیفکیشن کے مطابق اتھارٹی کا چیئرپرسن کوئی دوسرا عہدہ نہیں رکھے گا۔

 

نجی گاڑی دودھ گنگا نالہ میں لڑک گئی
خاتون لقمۂ اجل
ارشاد احمد
سرینگر//بدھ کی شام برزلہ علاقے میں ایک پرائیویٹ کار دودھ گنگا نالہ میں لڑھک گئی جس کے نتیجے میں ایک خاتون کی موت واقع ہوئی جبکہ ایک خاتون زخمی ہوئی۔پولیس کے مطابق ‘K10’ کار زیر نمبر/0760 JK01AJ بلبل باغ برزلہ کے قریب دودھ گنگا نالہ میں لڑھک گئی،جس کے فوراً بعد محکمہ فائر اینڈ ایمرجنسی کو اطلاع دی گئی،جن کا عملہ حرکت میں آیا اور دودھ گنگا نالہ سے کار کو نکالنے کی کوشش کی۔ اس موقع پر کار میں سوار دو خواتین کو زخمی حالت میں نکالا گیا جن کو فوری طور ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں ڈاکٹر نے ایک خاتون کو مردہ قرار دیا ۔ ،مہلوک خاتون کی شناخت بلقیس اختر کے بطورِ ہوئی جبکہ شریفہ اختر زخمی ہیں اور زیر علاج ہیں۔

 

لونڈامونہ بل ہندوارہ سرکارکی نظروں سے اوجھل
پینے کا پانی ، سڑک رابطہ اور دیگر سہولیات ندارد
اشرف چراغ
کپوارہ//شمالی ضلع کپوارہ کے ایسے بھی دور دراز علاقے ہیں جہا ں لوگو ں کو بنیادی سہولیات کا فقدان ہے جس کی وجہ سے ان علاقوں کے لوگوں کو سخت مشکلات کاسامنا ہے ۔ہندوارہ کے لونڈا مونہ بل ایسا ہی ایک دور دراز علاقہ ہے جہا ں آج کے اس جدید دور میں بھی بنیادی سہولیات کا فقدان ہے تاہم ڈی ڈی سی چیئرمین کپوارہ عرفان سلطان پنڈت پوری نے بدھ کے روز افسران کے ہمراہ علاقہ کا دورہ کیا اور لوگو ں کی روئداد سنی ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ اس علاقہ میں بہتر سڑک رابطے کے علاوہ پینے کے پانی کی شدید قلت پائی جاتی ہے ۔انہو ں نے مزید بتایا کہ لونڈا مونہ بل میں پینے کے پانی کی قلت کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ خواتین کو کئی کلو میٹر دور جنگل سے سفر کر کے پینے کا پانی حاصل کرتی ہیں ۔ لوگو ں کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس علاقہ کو طبی سہولیات کا بھی سخت سامنا ہے کیونکہ یہا ں کے نزدیکی نیو ٹائپ پرائمری ہیلتھ سنٹر مونہ بل میں طبی یا نیم طبی عملہ موجود نہیں ہے اور مریضوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔لوگو ں کے مسائل حل کرنے کے لئے ڈی ڈی سی چیئر مین عرفان سلطان پنڈت پوری نے ایگزیکٹیوانجینئر محکمہ جل شکتی ہندوارہ ڈویژن اور ایگزیکٹیوانجینئرآر اینڈ بی ہندوارہ اور دیگر افسران کے ہمراہ علاقہ کادوررہ کیا اور لوگو ں سے ان کے روز مرہ مشکلات کے حوالہ سے جانکاری حاصل کی ۔انہو ں نے متعلقہ افسران کو ہدایت دی کہ وہ لوگوں کو در پیش مسائل حل کرنے کو اولین ترجیحات میں شامل کریں اور پینے کے پانی کا مسئلہ فوری طور حل کریں ۔پنڈت پوری نے لوگو ں کو یقین دلایا کہ وہ ان کے مسائل حل کرنے کی پوری کوشش کریں گے ۔

ٹنگمرگ میں رابطہ سڑکوں کی حالت ناگفتہ بہ
مشتاق الحسن
ٹنگمرگ//ٹنگمرگ میں رابط سڑکوں کی حالت ناگفتہ بہہ ہے اور لوگ پی ایم جی ایس وائی اور آر اینڈ بی محکموں سے ناراض ہیں۔ٹنگمرگ زرن ،بٹہ پورہ زرن ،تریرن فیروزپورہ اوراسپتال روڈ کے علاوہ دور افتادہ گجر بستی رنگہ والی سڑک پر جگہ جگہ کھڈ بن چکے ہیں جس کے نتیجے میں ان سڑکوںپر چلنے پھرنے میں مشکلات کا سامناکرنا پڑتا ہے۔ ادھر اوسن کارہامہ رابط سڑک بھی خراب ہے جس پر ٹرانسپورٹروں نے اپنی سروس چلانے کیلئے عوام سے معذرت طلب کی ہے۔ کارہامہ کے معروف سماجی کارکن ایڈوکیٹ اویس احمد بٹ نے ٹنگمرگ میں رابط سڑکوں کی مرمت کرنے میں محکمہ پی ایم جی ایس وائی اور محکمہ ار اینڈ بی کی غفلت شعاری پر تشویش کا ظہار کیا ہے اور ایل جی انتظامیہ سے ٹنگمرگ میں خستہ حال رابط سڑکوں کی فوری مرمت کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

فائنانس اکائونٹ اسسٹنٹ امیدوار سراپا احتجاج
حتمی سلیکشن لسٹ جلد منظر عام پر لانے کا مطالبہ
سرینگر//یو این آئی// فائنانس اکائونٹ اسسٹنٹ امتحانات میں کامیاب قرار دئے گئے امیدوار اپنے مطالبے کو لے کر گذشتہ تین ہفتوں سے یہاں پریس کالونی میں مسلسل احتجاجی راستہ اختیار کئے ہوئے ہیں۔احتجاجی امیدواروں کا مطالبہ ہے کہ اس سلیکشن لسٹ کو کسی بھی صورت میں منسوخ نہ کیا جائے اور حتمی سلیکشن لسٹ کو جلد از جلد منظر عام پر لایا جائے ۔ایک امید وار نے بدھ کو میڈیا کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ افواہیں گردش کر رہی ہیں کہ اس سلیکشن عمل کو منسوخ کیا جا ئے گا۔انہوں نے کہا’’اگر کسی عہدیدار نے اس میں کوئی غلطی کی ہے تو اس میں ہمارا کیا قصور ہے اس لسٹ کو بند کرکے ہمیں ٹارگیٹ کیوں بنایا جا رہا ہے‘‘۔ان کا کہنا تھا کہ ہم نے دن رات محنت کرکے اس امتحان میں کامیابی حاصل کی ہے اور اب اس کو منسوخ کرنا ہمارے ساتھ نا انصافی ہے ۔قابل ذکر ہے کہ مارچ کے مہینے میں ایف اے اے امیداروں کا امتحان منعقد کیا گیا تھا جس میں 972امیدواروں کو کامیاب قرار دیا گیا تھا۔ان اسامیوں کے لئے زائد از ڈیڑھ لاکھ امیدواروں نے فارم جمع کئے تھے ۔واضح رہے کہ ایس آئی امتحانات کو منسوخ کرنے کے بعد کئی افراد نے فائنانس اکاونٹ اسسٹنٹ امتحانات میں مبینہ دھاندلیوں کی تحقیقات کرنے کا مطالبہ کیا۔افواہیں گشت کر رہی ہیں کہ سرکار اس لسٹ کو بھی منسوخ کر سکتی ہے لیکن ابھی تک اس بارے میں کوئی حتمی فیصلہ نہیں لیا گیا۔

آری پل ترال میں آنگن واڑی ورکروں کا احتجاج
رکی پڑی تنخواہوں کی واگزاری کا مطالبہ
سید اعجاز
ترال// آری پل تحصیل میں آنگن واڑی ورکروں اور ہلپروں نے بدھ کو خاموش احتجاج کیا ۔ احتجاجی خواتین نے تین ماہ سے رکی پڑی تنخواہوں کے ساتھ ساتھ دیگر مراعات کی فراہمی کا مطالبہ کیا ۔احتجاجی خواتین نے کہا کہ کوئی بھی محکمہ ہو آنگن واڑی ورکروں کو ان کے شانہ بشانہ کام کرنے کا حکمنامہ مل جاتا ہے لیکن تنخواہ انتہائی قلیل ہے اور افسوس اس بات کا ہے کہ وہ بھی چار ماہ سے بند ہے جس کی وجہ سے مذکورہ ملازمین طرح طرح کی پریشانیوں کا سامنا کر رہے ہیں ۔انہوں نے بتایاکہ عید کے مقدس موقع پر بھی انہیں تنخواہ نہیں ملی ۔ انہوں نے تنخواہ کے ساتھ ساتھ تین سال کے ائیر یرس فراہم کرنے کا مطالبہ بھی کیا ۔

عوامی شکایات کے ازالے کا کیمپ
خیار بانڈی پورہ میںمختلف مسائل پر تبادلہ خیال
عازم جان
بانڈی پورہ// لیفٹیننٹ گورنر انتظامیہ کے بلاک دیوس اقدامات کو جاری رکھتے ہوئے بدھ کو خیار بانڈی پورہ میں خصوصی عوامی شکایات ازالہ کیمپ کا انعقاد کیا گیا تاکہ عوام کو درپیش مسائل کا پہلے ہاتھ سے جائزہ لیا جا سکے۔ پروگرام میں مقامی لوگوں کی بھر پور شرکت دیکھنے میں آئی جو علاقے کے مسائل کو ضلعی انتظامیہ کے سامنے پیش کرنے کے لیے پرجوش تھے۔ خیار میں شکایت کے ازالے کے کیمپ کی صدارت ایڈیشنل ضلع ترقیاتی کمشنر بانڈی پورہ افسر علی خان نے کی اور اس میں اے سی ڈی بانڈی پورہ عبدا لرشید داس، تحصیلدار بانڈی پورہ، بی ڈی او بانڈی پورہ اور ضلع انتظامیہ کے دیگر افسران کے علاوہ مختلف عہدیداروں نے شرکت کی۔دیگر مسائل کے علاوہ لوگوں نے بجلی کی باقاعدہ فراہمی، پینے کے صاف پانی کی دستیابی، پنچایتوں میں سالڈ ویسٹ مینجمنٹ، آبی ذخائر کی تزئین و آرائش اور گھر گھر کچرے کو جمع کرنے کی سہولت کے مسائل کو اٹھایا۔ ایڈیشنل ضلع ترقیاتی کمشنر نے عوام کی تمام شکایات اور مطالبات کو سنے اور شکایات کے ازالے کے کیمپ کے دوران موجود متعلقہ افسران سے موقع پر ہی جواب طلب کیا۔ اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی شکایات کے ازالے کے کیمپوں کے انعقاد کا مقصد عوام الناس سے مقامی مسائل کا درست اور وقتی ازالہ کے لیے زمینی جائزہ لینا ہے۔اسی طرح عوامی شکایات کا ازالہ کیمپ بلاک آفس گریز جس کی صدارت سب ڈویژنل مجسٹریٹ گریز ڈاکٹر مدثر وانی نے کی اور اس میں عوام الناس کے علاوہ مختلف محکموں کے افسران نے شرکت کی۔

بڈگام میں اپنی پارٹی کی میٹنگ
عوامی رابطہ کو وسعت دینے کا فیصلہ
بڈگام// بڈگام ضلع میں بدھ کو اپنی پارٹی کے کارکنوں کا ایک اجلاس منعقد ہوا، جس میں پارٹی کے مسائل کے ساتھ ساتھ آنے والے اسمبلی انتخابات کی تیاریوں سے متعلق پر غور و خوض کیا گیا۔میٹنگ کی صدارت پارٹی کے نائب صدر جاوید مصطفی میر نے کی جبکہ پارٹی کے جنرل سیکریٹری رفیع احمد میر، صوبائی صدر کشمیر محمد اشرف میر، سٹیٹ سیکریٹری اور ضلع صدر بڈگام منتظر محی الدین اور کئی دیگران لیڈران بھی موجود تھے۔موصولہ بیان کے مطابق جاوید مصطفی میر نے میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کارکنوں پر زور دیا کہ وہ اپنی سیاسی سرگرمیوں اور عوامی رابطہ مہم میں مزید سْرعت لائیں اور زمینی سطح پر پارٹی کو مزید مضبوط کریں۔انہوں نے کہا’’وقت آگیا ہے کہ جب آپ کو تمام مکاتب فکر سے وابستہ لوگوں کے ساتھ رابطہ کرکے اْنہیں اپنی پارٹی کے عوام دوست ایجنڈے اور پالیسیوں سے واقف کرانا ہے۔ جموں کشمیر کے بارے میں اپنی پارٹی کے ویژن کو عوام میں مقبول بنانے کی ذمہ داری آپ سب کی ہے‘‘۔انہوں نے مزید کہا’’ ہمیں ممبرشپ مہم کو وسعت دینی ہوگی کیونکہ جتنے زیادہ لوگ ہمارے ساتھ جڑیں گے اپنی پارٹی اتنی ہی مضبوط ہوگی‘‘۔نائب صدر نے کارکنوں کو صلاح دی کہ اْن کا تعلق خواہ پارٹی کی کسی بھی ونگ سے ہو، اْنہیں اپنی سیاسی سرگرمیاں تیز کردینی چاہئے۔انہوں نے کہا’’لوگ جانتے ہیں کہ اپنی پارٹی جموں کشمیر میں امن، خوشحالی اور تعمیر و ترقی کے لئے کام کررہی ہے۔ اس لئے اپنی پارٹی کے ساتھ لوگوں کی کافی اْمیدیں وابستہ ہیں اور ہمیں ان اْمیدوں پر پورا اترنا ہوگا‘‘۔اس موقع پرکئی افراد اپنی پارٹی میں شامل ہوئے جن میں این سی کے محمد مقبول شیخ، غلام نبی ڈار، عبدالعزیز ڈار،پی ڈی پی کے منظور احمد ریشی، پی ڈی ایف کے گلزار احمد بٹ اور دیگر کئی لوگ شامل ہیں۔

خانقاہ معلی میں محرم کی فضیلت پرخطاب
سرینگر//یوم حسینؑ کی تقریب کے سلسلے میں خانقاہ معلی میں جمعتہ المبارک5اگست مولانا ریاض احمد ہمدانی محرم الحرام اور عاشورہ کی فضیلت اور واقعہ کربلا خاصکر حضرت امام عالی مقامؑ کی سیرت پرخطاب کریں گے۔ نماز جمعہ کے بعد ختمات المعظمات ، درود واذکار اور اورادخوانی کی مجلس آراستہ ہوگی۔ایسی ہی مجالس تمام خانقاہوں میں منعقد ہوگی۔

بریانی گھوٹالے کی منصفانہ تحقیقات کی جائے: عام آدمی پارٹی
سرینگر//عام آدمی پارٹی نے جموں و کشمیر فٹ بال ایسوسی ایشن کے گھوٹالے کی منصفانہ جانچ کا مطالبہ کیا ہے۔پارٹی رہنما ڈاکٹر ناصر نواب نے بدھ کوایک پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ یہ کیسے ممکن ہے کہ 45 لاکھ روپے سے زائد رقم کھلاڑیوں کو بریانی کھلانے میں ہوا ہو اور لاکھوں روپے کاغذات کوفوٹوسٹیٹ کرنے پر ہوا ہو۔انہوں نے کہا’’یہ جموں و کشمیر میں گھوٹالوں کی کبھی نہ ختم ہونے والی فہرست میں ایک اور انٹری ہے جہاں سرکاری خزانے کھلے عام لوٹے جا رہے ہیں‘‘۔ڈاکٹر ناصرنے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ اس گھوٹالے کو چھپانے کی کوشش کی جا رہی ہے اور سرکاری ایجنسیاں اس بات پر یقین کر رہی ہیں کہ فٹ بال ایسوسی ایشن کی جانب سے 45 لاکھ روپئے سے زائد کی بریانی فٹ بال کھلاڑیوں میں تقسیم کی گئی ہے ۔پریس کانفرنس کے دوران یہ کہا گیا کہ صرف عام پارٹی واحد سیاسی تنظیم ہے جو جموں و کشمیر کے لوگوں کو ایک شفاف اور بدعنوانی سے پاک نظام فراہم کر سکتی ہے۔

اسکالرشپ میں اضافہ
قبائلی امورمحکمہ جموں کشمیر کا کام قابل ستائش :ڈاکٹر انشو کٹاریہ
سرینگر// آرینز گروپ آف کالجز کے چیئرمین ڈاکٹر انشو کٹاریہ نے سیکریٹری محکمہ قبائلی امور ڈاکٹر شاہد اقبال چودھری اور سپیشل سیکریٹری ہارون ملک کا شکریہ ادا کیا۔انہوں نے مشیر احمد ڈائریکٹر اور ڈاکٹر عبدالخبیر ڈپٹی ڈائریکٹر، قبائلی امورجموں و کشمیر، جموں و کشمیر کے قبائلی طلباء کے لیے اسکالرشپ کو 100-125 فیصد تک بڑھانے اور اس کے بعد تقریباً 350 نئے کورسز شامل کرنے کی کوششوں کے لیے بھی تعریف کی۔ کٹاریہ نے کہا کہ قبائلی امور کے محکمے کے اس اہم اقدام کے بعد جس کا مقصد قبائلی طلباء کی تعلیم میں مدد کو فروغ دینا ہے، نہ صرف شمالی ہند بلکہ پورے ملک میں اعلیٰ تکنیکی کورسز میں طلباء کے اندراج میں اضافہ کرے گا۔اس کے علاوہ اب وہ طلباء جو قانون، فارما، نرسنگ، پیرامیڈیکل، مصنوعی ذہانت وغیرہ کورسز میں اپنا کیریئر بنانا چاہتے ہیں۔ مختلف معروف تعلیمی اداروں میں اپنا داخلہ بھی کروا سکیں گے۔ یہ قبائلی طلباء کے لیے معیاری تعلیم کو یقینی بنانے کے لیے ایک بڑا فروغ ہے۔ واضح رہے کہ اسکالرشپ کو گروپ اے کورسز کے طور پر 2011-12 سے موجودہ 30,000 روپے فی سالانہ سے بڑھا کر 72,000 روپے فی سالانہ کردیا گیا ہے جس میں 12,000 روپے الاؤنس بھی شامل ہیں۔ گروپ بی کورسز کے لیے اسکالرشپ 20,000 روپے سالانہ پر 2011-12 سے اب تک بڑھا کر 53,200 روپے سالانہ کر دی گئی ہے جس میں 82,00 روپے بطور الاؤنس بھی شامل ہیں۔ گروپ سی کورسز میں اسکالرشپ کو 18,000 روپے سے بڑھا کر 41,700 روپے اور گروپ ڈی کورسز میں اسے 12,000 روپے سے بڑھا کر 28,700 روپے کر دیا گیا ہے جس میں الاؤنسز بھی شامل ہیں۔

سی آر پی ایف کا لالن اننت ناگ میں طبی کیمپ
سرینگر//سی آر پی ایف نے لالن گنور اننت ناگ میں مفت طبی کیمپ کا انعقاد کیاجس میں سینکڑوں مریضوں میں مفت ادویات بھی تقسیم کی گئیں۔اس سلسلے میں آر ودوا کمانڈنٹ 40ویں بٹالین نے کیمپ کا افتتاح کیا۔ کیمپ کے دوران دیگر افسران میں ڈی ایس کسوا، پی کے ٹوکس، نرسی مینا،بریجیش اور مقامی نامور شخصیات موجود تھیں۔ اس موقع پر کمانڈنٹ نے کہا کہ 40 ویںبٹالین سی آر پی ایف نے پہلے بھی کئی سوک ایکشن پروگرام منعقد کیے اور اننت ناگ کے مختلف حصوں سے تقریباً 400 ضرورت مند اور غریب خاندانوں میں مفت سینیٹائزر، ماسک، قوت مدافعت بڑھانے والے فوڈ سپلیمنٹس وغیرہ تقسیم کیے ہیں۔ انہوں نے مقامی عوام کو یہ بھی یقین دلایا کہ سی آر پی ایف ہمیشہ کشمیریوں کی مدد کرتا رہا ہے اور معاشرے کی امن، خوشحالی اور ترقی کے لیے ہر ممکن کوششیں کرتا رہا ہے۔سی این آئی

ڈی ڈی سی ممبر آری پل نے علاقے میں کام کاج کا جائزہ لیا
سید اعجاز
ترال//ڈی ڈی سی ممبر آری پل ترال منظور احمد گنائی نے تحصیل آری پل میں مختلف محکموں کے ملازمین کے ساتھ میٹنگ طلب کر کے علاقے کی تعمیرو ترقی کا جائزہ لیا۔میٹنگ کے دوران سماجی بہود اور دیہی ترقی کے مختلف ملازمین نے انہیں در پیش مشکلات سے آگاہ کیا ۔ ڈی ڈی سی ممبر نے علاقے میں تعینات ملازمین کو یقین دلایا کہ کہ وہ ان کے مسائل کو متعلقہ محکموں کے اعلیٰ افسران کے ساتھ اٹھائیں گے تاکہ علاقے میں ان کا کام کاج متاثر نہ ہو جائے ۔ اس دوران مقامی لوگوں کے کئی وفود بھی ڈی ڈی سی ممبر سے ملاقی ہوئے ہیں جنہوں نے انہیں مختلف مسائل کی طرف توجہ مبذول کروائی ۔لوگوں نے ہسپتال نئی عمارت میں منتقل کرنے کا مطالبہ کیا ۔

نیشنل کانفرنس کا اظہارِ تعزیت
سرینگر//نیشنل کانفرنس کے جنرل سکریٹری علی محمد ساگر نے پارٹی کے نائب صدر حلقہ جامع مسجد نوہٹہ محمد علی پنڈت ساکن پاندان کے انتقال پر گہرے صدمے کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے اس سانحہ ارتحال پر مرحوم کے جملہ سوگواران کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا اور مرحوم کی جنت نشینی کیلئے دعا کی۔ انہوں نے مرحوم کی عوامی خدمات کو یاد کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم کے دل میں ہمیشہ لوگوں کی خدمت کا جذبہ رہا اور آخری دم تک اپنے اصول پر قائم رہے۔ پارٹی کے صوبائی یوتھ صدر سلمان علی ساگر نے مرحوم کے گھر جاکر سوگواران کے ساتھ تعزیت پرسی کی ۔ اس موقع پر مرحوم کے حق میں دعائے مغفرت کی گئی۔ اُن کے ہمراہ بلاک صدرخانیار بشیر احمد وانی اور ڈپٹی میئر پرویز احمد قادری بھی تھے۔

اٹل انوویشن مشن ٹیم کا گرین ویلی ایجوکیشنل انسٹی ٹیوٹ کا دورہ
سرینگر//اٹل انوویشن مشن (اے آئی ایم) کے زیراہتمام 2 اگست کو گرین ویلی ایجوکیشنل انسٹی ٹیوشن سرینگر میں ایک پروگرام منعقد ہوا۔ مشن کی ٹیم میں مشن ڈائریکٹر، اٹل انوویشن مشن، ڈاکٹر چنتن وشنو دیپالی اپادھیائے، ڈائریکٹر، اٹل ٹنکرنگ لیبز، اے آئی ایم، پرتیک دیش مکھ، انوویشن لیڈ (اے آئی ایم)، وشنو پریا بیجاپور، انوویشن، اے آئی ایم اور سمیہ یوسف، ینگ پروفیشنل (میڈیا اینڈ کمیونیکیشن) اے آئی ایم کے علاوہ دیگر معززین میں عطا المنیم ٹاک، پرسنل آفیسر، ڈائریکٹوریٹ آف اسکول ایجوکیشن کشمیر ماجد احمد کوہلی، چیف ایجوکیشن آفیسر، سرینگر اور راجہ انجم، ڈپٹی چیف ایجوکیشن آفیسر سری نگر شامل تھے۔مشن ڈائریکٹر ڈاکٹر چنتن ویشنو نے اس موقع پر خطاب کیا اور مشن کے اغراض و مقاصد پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے اسکولی طلباء سے بھی بات چیت کی جو اسکول کی ٹنکرنگ لیب میں مختلف پروجیکٹس پر کام کر رہے ہیں۔ طلباء نے اپنے پروجیکٹس کا مظاہرہ کیا اور ٹیم کو اپنے مستقبل کے منصوبوں سے آگاہ کیا۔ ڈاکٹر چنتن نے طلباء کی تعریف کی اور بہتر کارکردگی پر ان کی حوصلہ افزائی کی۔اپنے خطاب میں ڈاکٹر چنتن وشنو نے اسکول کی نمایاں کامیابی اور گرین ویلی برادری کی کوششوں کی تعریف کی۔انہوں نے کشمیر کی منفرد خوبصورتی اور کشمیریوں کی بے مثال مہمان نوازی کی بھی تعریف کی۔اس موقع پر سکول کے بچوں کی جانب سے رنگا رنگ ثقافتی پروگرام پیش کیا گیا جسے ڈائریکٹر اور ان کی ٹیم نے خوب سراہا۔گرین ویلی ایجوکیشنل انسٹی ٹیوٹ طلباء کے لیے ایک بڑا پلیٹ فارم بنانے کا ارادہ رکھتا ہے اور معاشرے کی بہتری کے لیے ہمیشہ اپنا کردار ادا کرتا رہے گا۔

کشمیر یونیورسٹی میں آن لائن ریفریشر کورس اختتام پذیر
اساتذہ کو درپیش نئے چیلنجوں کے بارے میں بات چیت
سرینگر//کشمیر یونیورسٹی میں کامرس، مینجمنٹ اور اکنامکس کے شعبوں کے فیکلٹی ممبران کے لیے دو ہفتے کا ریفریشر کورس اختتام پذیر ہوا۔ (HRDC) کے زیر اہتمام آن لائن کورس کا افتتاح وائس چانسلر پروفیسر نیلوفر خان نے کیا۔کورس میں ملک بھر کی مختلف یونیورسٹیوں اور کالجوں کے چالیس اساتذہ نے شرکت کی۔پروفیسر آلوک کمار چکروال وائس چانسلر، گھاس داس سنٹرل یونیورسٹی (جی جی سی یو) بلاسپور، اختتامی سیشن کے مہمان خصوصی تھے۔تدریسی فیکلٹی کی مہارتوں کو بڑھانے اور بڑھانے میں اس طرح کے پروگراموں کے کردار کو اجاگر کرتے ہوئے پروفیسر کمار نے اساتذہ کو درپیش نئے چیلنجوں کے بارے میں بات کی۔ انہوں نے اعلیٰ تعلیم کے اساتذہ پر زور دیا۔کیشنل اداروں (HEIs) نے اپنے طلباء کو عالمی سطح پر مسابقتی بنانے کے لیے اور جدید تدریس سے متعلق بہترین طریقوں کو اپنانے پر بھی زور دیا۔ڈائریکٹر ایچ آر ڈی سی پروفیسر مشتاق اے درزی نے جدید دور کی تدریس کے دائرے میں اساتذہ کو بہترین طریقوں سے آشنا کرنے کے لیے ایسے ریفریشر کورسز کی اہمیت پر روشنی ڈالی۔شعبہ مینجمنٹ سٹڈیز کے کورس کوآرڈینیٹر ارشاد احمد ملک نے ریفریشر کورس کا مختصر جائزہ پیش کیا۔کئی شرکاء نے کورس کے بارے میں اپنی رائے دیتے ہوئے کہا کہ اس نے انہیں ابھرتے ہوئے علاقوں اور مطالعہ کے اپنے متعلقہ شعبوں میں پیشرفت سے متعلق ایک نیا نقطہ نظر اور تفہیم پیش کیا۔کوآرڈینیٹر ایچ آر ڈی سی ڈاکٹر سمیر گل نے اختتامی سیشن کی نظامت کی اور شکریہ کا کلمہ بھی پیش کیا۔

اسلامک یونیورسٹی کے زیر اہتمام عطیہ خون کا کیمپ
سرینگر//اسلامک یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹکنالوجی کی جانب سے 3 اگست 2022 کو ڈسٹرکٹ ہسپتال پلوامہ کے بلڈ بینک کے ساتھ ایک خون کا عطیہ کیمپ کا انعقاد کیا گیا۔ آزادی کا امرت مہواتسو کے ایک حصے کے طور پر منعقد ہونے والے اس کیمپ کو عملے اور طلباء کی جانب سے زبردست ردعمل ملا جس میں تقریباً ایک سو یونٹ خون کا عطیہ دیا گیا۔اس طرح کے کیمپوں کی مناسبت پر زور دیتے ہوئے، پروفیسر شکیل اے رومشو (وائس چانسلر IUST) نے کہا’’ IUST میں خون کے عطیہ کیمپوں کا باقاعدہ اہتمام رہا ہے، لیکن وبائی امراض کی وجہ سے ہم گزشتہ 2 سالوں سے ان کا انعقاد نہیں کر سکے۔ ہم ہر سال دو خون عطیہ کیمپ منعقد کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں کیونکہ خون ایک اہم وسیلہ ہے جسے صرف عطیہ کیا جا سکتا ہے اور تیار نہیں کیا جا سکتا۔ انہوں نے مزید کہا’’تعلیمی ماہرین کے علاوہ، ادارہ اخلاقی، سماجی اور انسانی اقدار کی پرورش کے لیے تعاون فراہم کرتا ہے۔ خون کا عطیہ ایک اہم سماجی خدمت ہے‘‘۔ڈاکٹر زاہدہ رسول نے کہا’’اس طرح کے کیمپ لگا کر، IUST ہیلتھ سینٹر طلباء میں خون کی شدید کمی کے سنگین مسائل کے بارے میں آگاہی پیدا کر رہا ہے اور پہلی بار عطیہ کرنے والوں کی حوصلہ افزائی کرنے کی کوشش کر رہا ہے کہ وہ خون کے عطیہ سے متعلق ابتدائی ہچکچاہٹ اور خوف کو دور کریں‘‘۔

عرس حضرت علی عالی بلخیؒ پکھر پورہ
بنیادی سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے:راتھر/ ہانجورہ
سرینگر//پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی کے جنرل سکریٹری ایڈوکیٹ غلام نبی لون ہانجورا اور نیشنل کافنرنس کے سینئر لیڈر ایڈوکیٹ عبدالرحیم راتھر نے ضلع انتظامیہ بڈگام پر زور دیا کہ وہ سالانہ عرس حضرت علی عالی بلخیؒ پکھر پورہ کے پیش نظر مناسب انتظامات کو یقینی بنائے۔پی ڈی پی جنرل سکریٹری نے کہا کہ انتظامیہ کو ضروری اشیاء کے مناسب ذخیرہ کو یقینی بنانے کے لئے تیار رہنا چاہئے اور عرس کے پیش نظر لوگوں کو تمام ضروری خدمات فراہم کی جائیں۔ ہانجورہ نے علاقے میں بازار کی چیکنگ کو تیز کرنے اور بلیک مارکیٹنگ کرنے والوں اور ذخیرہ اندوزوں پر قابو پانے کے لیے بھی کہا۔پی ڈی پی کے جنرل سکریٹری نے کہا کہ متعلقہ محکموں اور عہدیداروں کو اس بات کو یقینی بنانے کے لئے چوکنا رہنا چاہئے کہ عقیدتمندوں کو تمام ضروری خدمات حاصل ہوں اور کھانے کی اشیاء جیسے گوشت، مچھلی، پولٹری، ڈیری، تازہ بیکری کی مصنوعات، چاول، ایل پی جی سمیت ضروری اشیاء کی مناسب فراہمی ہو ۔پی ڈی پی کے جنرل سکریٹری نے انتظامیہ پر بھی زور دیا، خاص طور پر اہم محکموں کے عہدیداروں کو لوگوں تک پہنچنا چاہئے اگر انہیں کوئی شکایت ہے تو وہ ان عہدیداروں کے نوٹس میں لائیں۔ادھر نیشنل کانفرنس کے سینئرلیڈر ایڈوکیٹ عبدالرحیم راتھر نے ضلع انتظامیہ بڈگام سے اپیل کی کہ پکھر پورہ میں سالانہ عرس مبارک حضرت سید علی عالی بلخیؒ پر زائرین کیلئے بنیادی سہولیات جن میں پینے کا پانی، بجلی سپلائی، صحت و صفائی، غذائی اجناس کا وافر سٹاک اور ٹرانسپورٹ کے معقول انتظامات دستیاب رکھیں ۔انہوں نے کہا کہ اس بابرکت اور مقدس زیارت گاہ کے ساتھ عقیدتمندوں کو صدیوں سے والہانہ عقیدت رہی ہے اور وادی کے اطراف و اکناف سے عقیدت مند اس زیارت گاہ پر حاضری دیتے رہے ہیں۔ پارٹی کے ضلع صدرپلوامہ غلام محی الدین میر نے بھی اس سلسلے میں ایام متبرکہ کے دوران عقیدتمندوں کیلئے معقول اور مناسب انتظامات کی اپیل کی۔