اہل خواتین کاروباریوں کیلئے 94پروجیکٹوں کو منظوری

سرینگر//ضلع ترقیاتی کمشنر سرینگر محمد اعجاز اسد کی صدارت میں کل ضلعی سطح پر عمل درآمد کمیٹی (ڈی ایل آئی سی) کا اجلاس منعقد ہوا۔میٹنگ میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر سری نگر خورشید احمد شاہ، ڈپٹی ڈائریکٹر ایمپلائمنٹ محمد رؤف، ایل ڈی ایم عبدالمجید اور ڈی آئی سی، جے کے ای ڈی آئی اور دیگر متعلقہ محکموں کے افسران نے شرکت کی۔میٹنگ میں ضلع میں "تیجسوانی" سکیم کے نفاذ پر تفصیلی غور و خوض کیا گیا اور ضلع سری نگر کی بے روزگار اہل خواتین کاروباریوں کے کئی معاملات کمیٹی کے سامنے منظوری کے لیے لائے گئے۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے تفصیلی جائزہ لینے کے بعد ضلع کی اہل خواتین کاروباریوں کے تیجسونی سکیم کے تحت 94 پروجیکٹ کے معاملات کو منظوری دی۔منظوری کے بعد، کیسوں کو تفصیلی پروجیکٹ رپورٹ کی تیاری کے لیے JKEDI کو بھیجا جائے گا۔ اس کے بعد باضابطہ تقسیم سے پہلے مستفیدین کو ضلعی سطح پر تربیت دی جائے گی۔سکیم کی اہمیت پر روشنی ڈالتے ہوئے، ڈی ایل آئی سی کے چیئرمین نے کہا کہ تیجسوانی" اسکیم کامقصد ضلع کی 18 سے 35 سال کی عمر کی خواتین کو بااختیار بنانا اور ان کی حوصلہ افزائی کرنا ہے کہ وہ آمدنی پیدا کرنے کی سرگرمیوں کے لیے مینوفیکچرنگ، سروس، ٹریڈنگ یا چھوٹے کاروبار میں روزی روٹی کمانے کے لیے اپنا کاروبار شروع کریں۔ ضلع کی اہل ممکنہ خاتون کاروباری کو Mudra قرض کے تحت 5 لاکھ روپے تک کی مالی امداد حاصل کرنے میں سہولت فراہم کی جائے گی۔ڈی ڈی سی نے ڈپٹی ڈائریکٹر ایمپلائمنٹ اور دیگر متعلقہ افراد پر زور دیا کہ وہ بقیہ درخواستوں کی سکریننگ کریں ۔قابل ذکر ہے کہ تیجسونی سکیم کے تحت 10 کیس پہلے ہی بینکوں کو تقسیم کے لیے بھیجے جا چکے ہیں۔