اچھن سعدپورہ میں کوڑاکرکٹ ٹھکانے لگانے کیخلاف مظاہرہ

سرینگر//اچھن سعد پورہ عیدگاہ کے لوگوں نے علاقہ میں کوڑا کرکٹ ٹھکانے لگانے کیخلاف پریس کالونی میں احتجاج کیا۔ پریس کالونی لالچوک میں پیر کو سعدپورہ عیدگاہ کے بیسوں لوگوں نے جمع ہوکر احتجاج کیااور نعرہ بازی کی۔مظاہرین کاکہنا ہے کہ گندگی اور کوڑے کرکٹ کو ٹھکانے والی جگہ مکینوں کیلئے کسی عذاب سے کم نہیں ہے جبکہ سرینگر مونسپل کارپوریشن نے لوگوں کی حالات کے رحم وکرم پر چھوڑ دیا ہے۔مظاہرین نے کہا کہ گندگی اور کوڑاکرکٹ سے اٹھنے والی عفونت سے مکین بیماریوں میں مبتلا ہوئے ہیں اور انتظامیہ ٹس سے مس نہیں ہو رہا ہے۔مظاہرین نے کہا کہ یہ معاملہ اگرچہ کئی بار متعلقہ حکام کی نوٹس میں بھی لایا گیا تاہم آج تک اس سلسلے میں کوئی بھی قدم نہیں اٹھایا گیا اور اہل علاقہ کے مسائل کو حل کرنے میں ناکام ہوئے۔ مقامی جامع مسجد کے ممبر عبدلمجید خان نے کہاکہ اچھن میں مذکورہ مخصوص جگہ کے عقب میں دیگر اراضی کو بھی مبینہ طور سرکار نے دھونس دبائو سے حاصل کیا اور اس جگہ کوبھی گندگی کو ٹھکانے کیلئے استعمال کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔انہوں نے کہاکہ اگر چہ مقامی لوگوں نے اس کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے اراضی کو حاصل کرنے کا سلسلہ بند کیا تاہم انتظامیہ کسی بھی صورت میں اس جگہ کو بھی حاصل کر کے کوڑا کرکٹ کو ٹھکانے لگانے کیلئے استعمال میں لانا چاہتی ہے۔مذکورہ شہری نے مزید کہا’’ صورتحال کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ گزشتہ کئی برسوں سے کوڑاکرکٹ اور گندی کی وجہ سے علاقے میں قریب8شہری موذی بیماریوں میں مبتلا ہوچکے ہیں۔ عبدالمجید خان نے کہا کہ گزشتہ دنوں ایک ٹیم بیرون ریاست سے آئی تھی اور علاقے کا دورہ کیا جبکہ انہوں نے اپنی رپورٹ پیش کرتے ہوئے کہا کہ اس علاقے میں زیر زمین کچرے کا گیس جمع ہواہے اور یہ خطرے کی گھنٹی ہے۔