اپنی مدد آپ …سرحدی گائوں کھڑی کے لوگوں نے کچی سڑک تعمیرکرلی

پونچھ//سرحدی ضلع پونچھ کی حدِ متارکہ کے قریب واقع کھڑی کے لوگوں نے اپنی مددآپ کے تحت سڑک تعمیرکردی ہے ۔تفصیلات کے مطابق کھڑی گائوں کے لوگوں نے حکومتی غیرتوجہی سے پریشان ہوکراپنی ترقی کی رکاوٹ کودورکرتے ہوئے اپنی مددآپ کے تحت گاؤں کو سڑک رابطہ تعمیرکے مثال قائم کی ہے۔اس بارے میںگاؤں کے لوگوں کے مطابق وہ عرصہ دراز سے انتظامیہ سے اپیل کرتے آ رہے ہیں کہ کھڑی کی وارڈ نمبر 2، 3، 4 کو سڑک رابطہ سے جوڑا جائے لیکن ہمیشہ عدم توجہی کا شکار ہوتے رہے جس کے بعد چندہ جمع کر کے لوگوں نے حکومتی عدم توجہی کو اپنی مجبوری بننے نہ دیتے ہوئے کئی کلومیٹر کچی سڑک بنا دی۔اس سلسلہ میںمقامی لوگوں نے اپنی ذاتی اراضی بھی سڑک کے لئے وقف کر دی۔اس سڑک کی تعمیر سے گاؤں کے سینکڑوں نفوس کیلئے گھنٹوں کاپیدل سفر اب قدرے آسان ہوگیاہے۔مگر اب پکا روڈ کون بنائے گا حکومت یا پھر وہ خود یہ سوالیہ نشان بنا ہوا ہے۔کھڑی میں پہلی بار سڑک اپنی مدد آپ کے تحت بناکر گائوں کے محنت کش لوگوں نے دوسروں کیلئے عزم و ہمت کی مثال قائم کر دی۔کھڑی کے مکین حکومتی اداروں اور منتخب نمائندوں کی راہیں تکتے رہے ۔ حکومتی عدم توجہی کو علاقائی لوگوں نے اپنی مجبوری بننے نہ دی اور اجتماعی طورپر نکل پڑے اور سڑک کی تعمیر میں حصہ ڈالتے رہے۔کھڑی گاؤں سے تعلق رکھنے والے منظور احمد کے مطابق کھڑی کے وارڈ نمبر2،3،4کے لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا تھا۔انہوں نے بتایا کہ حد متارکہ کے قریب کا علاقہ ہونے کی وجہ سے ایک تو انھیں ہر روز سرحدی کشیدگی کا سامنا رہتا ہے ،ستم در ستم کہ انھیں بنیادی سہولیات بھی فراہم نہیں کی جاتی۔انہوں نے کہا کہ جب انھوں نے مقامی سرپنچ سے اپنی مشکلات کاذکر کیا تو انہوں نے تجویز پیش کی کہ اگر وہ لوگ ان کا ساتھ دیں تو وہ اپنی مدد آپ کرتے ہوئے سڑک تعمیر کریں گے جس کے بعد تمام لوگوں نے یہ کام انجام دیا۔ انہوں نے کہا کہ مقامی کوگوں نے اپنی حیثیت کے مطابق جے سی پی لگا کر کچی سڑک تو بنا ئی لی لیکن وہ انتظامیہ سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ اس سڑک کو پختہ بنانے کے لئے انھیں سرکاری رقومات فراہم کریں۔