اپر کنڈی میں بجلی کا ترسیلی نظام لکڑی کے کھمبوں کے بغیر ناممکن | تاریں کسی بھی وقت حادثے کا باعث بن سکتی ہیں ،محکمہ خاموش

کوٹرنکہ //کوٹرنکہ سب ڈویژن کی پنچایت اپر کنڈی میں بجلی کا ترسیلی نظام لگ بھگ لکڑی کے کھمبوں و سبز درختوں کے بغیر ناممکن ہے جوکہ عام زندگی کیلئے ایک بڑا خطرہ ثابت ہو سکتا ہے ۔صارفین نے محکمہ پر الزام عائد کرتے ہوئے بتایا کہ پنچایت حلقہ کی وارڈ نمبر 5اور 6میں بجلی کے پختہ کھمبوں کی جگہ لکڑی کے عارضی کھمبے نصب کر کے لوگوں کے گھروں تک بجلی کی فراہمی کو یقینی بنایا گیا ہے ۔انہوں نے محکمہ کے ملازمین و آفیسران پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ گائوں میں بجلی کے بل ارسال کرنے کیلئے ملازمین نے ایک جگہ کا تعین کیا ہوا ہے جبکہ اس کے علاوہ وہ بگڑتے ہوئے نظام کی مرمت کے سلسلہ میں گائوں حاضر نہیں ہوتے جس کی وجہ سے کئی برسوں سے بجلی کی سپلائی لکڑی کے کھمبوں و سبز درختوں کی مدد سے ہی چلائی جارہی ہے ۔انہوں نے کہاکہ دیہات میں بجلی کی فراہمی کیلئے کئی سکیمیں چلائی گئی ہیں لیکن مذکورہ علاقہ میں کوئی بھی سکیم ابھی تک پہنچائی ہی نہیں جاسکی جس کی وجہ سے صورتحال مزید ابتر ہو گئی ہے ۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ انہوں نے کئی مرتبہ متعلقہ حکام سے بجلی کے پختہ کھمبوں کے سلسلہ رجوع کیا لیکن ابھی تک زمینی سطح پر کوئی عملی کام نہیں ہو سکا ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ اپر کنڈی میں بجلی کے خستہ حال نظام کو جلدازجلد معیاری بنایا جائے تاکہ عام لوگوں کی دقتیں کم ہو سکیں ۔