اپر کنڈی میں بجلی نظام تباہی کے دہانے پر ترسیلی لا ئنیں سبز درختوں سے آویزاں،جانی نقصان کا خدشہ

کوٹرنکہ // سب ضلع کوٹرنکہ کے متعدد پنچایت حلقوں میں بجلی نظام تباہی کے دہانے پر ہے۔ مرکز کی طرف سے چلائی جارہی متعددسکیموں سے بھی کوٹرنکہ کے دور دراز علاقوں میں بجلی کی حالت میں کوئی سدھاردیکھنے کو نہیں مل رہا ہے۔ پنچایت حلقہ اپر کنڈی کے وارڈ نمبر 6 سے مقامی لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ علاقہ میں 97 فصید سے زائد بجلی کی ترسیلی لائنیں سبز درختوں اور لکڑی کے کھمبوں سے بندھی ہوئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس علاقہ میں نہ تو کھمبے دئے گئے ہیں اور نہ ہی محکمہ بجلی کے ملازمین نے اس علاقہ کی طرف توجہ دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہر ماہ محکمہ بجلی لوگوں کو بل ارسال کرتا ہے لیکن ترسیلی نظام ٹھیک کرنے کی جانب کوئی توجہ نہیں دی جارہی ہے جس کی وجہ سے کسی بھی وقت کسی بڑے حادثہ کا احتمال ہے۔ مقامی لوگوں نے لیفٹنٹ گورنر و ضلع انتظامیہ سے اپیل کرتے ہوے کہا کہ اس پسماندہ علاقہ کی طرف توجہ دی جائے اور بجلی کے نظام کو فوری طور درست کیاجائے۔