آن لائن اور آف لائن امتحان کے انعقاد پر رضامندی | جموں یونیورسٹی شعبہ قانون کے طلباء نے بھوک ہڑتال ختم کردی

جموں//جموں یونیورسٹی حکام کی اس یقین دہانی کے بعد قانون کے طلبائنے آج اپنی چار روزہ بھوک ہڑتال ختم کردی کہ ان کے امتحانات آف لائن ہوں گے۔لا اسکول اور ایل ایل بی سمیت قانون کے طلبا کی آن لائن امتحانات کے انعقاد کے فیصلے کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے لاء کے طلباء کل جموں یونیورسٹی میں وائس چیئرمین کے دفتر کی عمارت کے باہر جمع ہوئے تھے۔محکمہ قانون سے جموں یونیورسٹی میں طلبا کے ایک رہنما ، اجے لکھوترا نے بتایا "تین دن کے احتجاج کے بعد یونیورسٹی نے آف لائن امتحانات کے انعقاد کے ہمارے مطالبے کو قبول کرلیا ہے۔ یونیورسٹی نے ان قانون طلبہ کے لئے آف لائن امتحان کا ایک آپشن بھی رکھا ہے جو امتحان میں شامل ہونا چاہتے ہیں۔اسی طرح ، انجینئرنگ کے طلباء کا مطالبہ بھی مناسب نگرانی کے تحت آن لائن امتحانات کے انعقاد کے لئے قبول کیا گیا۔انہوںنے کہا‘‘ہم کل رات بھوک ہڑتال پر تھے۔ تاہم ، ہم نے یونیورسٹی میں حکام کی یقین دہانی کے بعد اسے ختم کیا ہے۔اتفاقی طور پرکل رات محکمہ قانون کے متعدد نوجوان بھوک ہڑتال پر بیٹھ گئے اور ان میں انجینئرنگ کے طلباء بھی شامل ہوگئے ، اور دونوں آن لائن امتحان کے انعقاد کا مطالبہ کررہے تھے ، جبکہ محکمہ قانون نے امتحان کو آف لائن رکھنے کے فیصلے کی مخالفت کی۔ بھوک ہڑتال کے دوران ، ایک طالب علم بے ہوش ہوگیا تھا اور اسے ڈاکٹروں کے ذریعہ مطلوبہ علاج مہیا کیا گیا تھا۔