آمشی شوپیان میں جھڑپ،3جنگجوجاں بحق

سرینگر//شوپیاں کے مضافات چک آمشی پورہ میں فوج اور جنگجوئوں کے درمیان میوہ باغات میں کئی گھنٹوں تک جاری رہنے والی جھڑپ میں3عدم شناخت جنگجو جان بحق ہوئے۔شوپیاں ضلع صدر مقام سے تقریباً11کلو میٹر دور آمشی پورہ نامی گائوں میں جنگجوئوں کی موجود گی کی اطلاع ملنے کے بعد فوج کے62ا ٓر آر ،14بٹالین سی آر پی ایف، ایس او جی اہلکاروں نے جمعہ اور سنیچر کی درمیانی رات قریب2بجے علاقے میں ایک میوہ باغ کو محاصرے میں لیا۔پولیس ذرائع کے مطابق فورسز نے ساڑے 4 بجے تلاشی کارروائیوں کا آغاز کیااور مقامی میوہ باغ میں ایک پختہ شیڈ کا گھیرا تنگ کیا۔ ذرائع نے بتایا کہ جنگجوئوں نے فورسز کونزدیک آتے دیکھ کراندھا دھند فائرنگ کرتے ہوئے فرار ہونے کی کوشش کی ،تاہم فورسز نے پہلے ہی باغ کو چارواں اطراف سے محاصرے میں لیا تھا ۔، فورسز نے بھی جوابی فائرنگ کی جس کے نتیجے میں ابتدائی فائرنگ میں ایک جنگجو جان بحق ہوا ۔طرفین میں قریب صبح8بجے تک فائرنگ اور جوابی فائرئنگ کا سلسلہ جاری رہا جس دوران مزید دو جنگجو جاں بحق ہوئے۔ جائے تصادم سے پولیس نے 3 جنگجوئوں کی لاشوں کو برآمد کر لیا ہے ۔پولیس نے جھڑپ میں جنگجوئوں کی ہلاکت کی تصدیق کرتے ہوئے کسی ایک کی شناخت ظاہر نہیں کی ۔تاہم غیر سرکاری ذرائع سے معلوم ہوا ہے مارے گئے جنگجو مقامی ہیں، جن کو کووِڈ- 19 ایس او پی کے تحت شمالی کشمیر میں سپرد  خاک کیا جائے گا۔  اس دوران حکام نے ضلع میں انٹرنیٹ خدمات معطل کر دی ہے،جبکہ حساس مقامات پر بندشیں عائد رہیں ۔ شوپیان جھڑپ کے ساتھ ہی جنوبی کشمیر میں گزشتہ 24گھنٹوں میں دو مسلح تصادم آرائیوں میں 6 جنگجوئوں جاں بحق ہو گئے، جبکہ امسال ابھی تک مختلف جھڑپوں کے دوران 136جنگجو جاں بحق ہو گئے ہیں ۔ادھر پولیس بیان کے مطابق مصدقہ اطلاع ملنے پر فوج کی62آرآرنے شوپیان ضلع میں امشی پورہ گائوں کامحاصرہ کیا۔تلاشی کے دوران جنگجوئوں نے فوج پر فائرنگ شروع کی اور اس کے بعد جھڑپ شروع ہوئی۔پولیس بیان کے مطابق اس کے بعد پولیس اور سی آر پی ایف بھی اس میں شامل ہوئے۔جھڑپ کے دوران تین عدم شناخت جنگجو جاں بحق ہوئے ۔جائے تصادم سے تینوں  جنگجوئوں کی لاشوں کو نکالاگیااوران کی شناخت کی جارہی ہے ۔بیان کے مطابق جائے تصادم سے اسلحہ اور گولہ بارود کے علاوہ قابل اعتراض مواد بھی برآمد ہوا۔تینوں جنگجوئوں کی میتوں کو آخری رسومات کی ادائیگی کیلئے بارہ مولہ بھیج دیاگیاجہاں قانونی لوازمات پورا،اور ڈی این اے نمونے حاصل کئے جانے کے بعدانہیں سپردخاک کیا جائے گا۔ پولیس بیان میں کہاگیا ہے کہ اگر کسی کنبے کاجاں بحق جنگجوئوں کے اپنارشتہ ہونے کادعو ی ہو،وہ بارہ مولہ آکر کے شناخت کرکے آخری رسومات میں حصہ لے سکتے ہیں۔پولیس تھانہ ہیرپورہ میںاس سلسلے میں کیس زیر نمبر42/2020درج کرکے تحقیقات شروع کی گئی ہے۔