آئے روزنئی سیاسی جماعتوں کاقیام جموں کشمیرکے عوام کی آوازتقسیم کرنے کی کوشش: کمال

سرینگر// نیشنل کانفرنس کے معاون جنرل سکریٹری ڈاکٹر شیخ مصطفیٰ کمال نے کہا ہے کہ تقسیمی عناصر کشمیریوں کی آواز کو دبانے کی مذموم سازشوں میں مصروف ہیں اوروقت کا تقاضا ہے کہ ہم دشمن کے ان حربوں کو وقت رہتے سمجھیں اور اُن کے عزائم ناکام بنا دیں۔ انہوں نے کہاکہ یہاں آئے روز نئی سیاسی جماعتیں کیوں معرض وجود آرہی ہیں، اس پر غور کرنا وقت کی اہم ضرورت ہے۔انہوںنے کہاکہ صاف ظاہر ہے کہ ایسا صرف اور صرف یہاں کے لوگوں کی آواز کو تقسیم کرکے کمزور کرناہے۔ ایک بیان کے مطابق ان باتوں کا اظہار انہوں نے پارٹی عہدیداروں اور کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ بی جے پی کی مرکزی حکومت کو یہاں کے عوام کے احساسات، جذبات اور امنگوں کی کوئی پرواہ نہیں ہے بلکہ نئی دلی کو جموں وکشمیر کی زمین اور وسائل چاہئے۔نئی دلی زمینی حقائق اور اصل مسائل کی طرف توجہ دینے کے بجائے آئے روز عوام کْش فیصلے لے رہی ہے اور ایسا محسوس ہورہا ہے کہ حکومت نے یہاں کے عوام کیخلاف اعلان جنگ کر رکھا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت جموں و کشمیر کے عوام کی بات سننے کے بجائے یہاں آئے روز نت نئے حربے اپنا رہی ہے۔ آئے روز یہاں نئی سیاسی جماعتیں کھڑی کی جارہی ہیں ، جس کا واحد مقصد یہاں کے عوام کی آواز کو تقسیم کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جموں وکشمیر کو عوام وقت رہتے ایسے تمام حربوں کو سمجھنا ہوگا اور ان تمام سازشوں کو ناکام بنانے کیلئے اتحاد و اتفاق کا مظاہرہ کرنا ہوگا۔ ڈاکٹر کمال نے کہا کہ 2014کے انتخابات میں بھی نیشنل کانفرنس عوام کو ہوشیار کرنے کی پوری کوشش کی لیکن اُس وقت ہماری باتوں کا نظرانداز کیا گیا ، جس کا خمیازہ جموں و کشمیر کے تینوں خطوں کے لوگوں کو بری طرح بھگتنا پڑا اور آج بھی بھگت رہے ہیں۔