اُچھال کامیابی کا ثبوت دفعہ370منسوخی کے بعد شرحِ رائے دہی14فیصد سے40فیصد بڑھی

  علیحدگی پسند وں نے بھی ووٹ ڈالا،پتھر چلے نہ لاٹھی:امیت شاہ

سرینگر//مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے کہا کہ سرینگر حلقے میں ماضی میں ووٹر ٹرن آئوٹ میں 14 فیصد سے بڑھ کر اب تقریباً 40 فیصد ہونا آرٹیکل 370 کو منسوخ کرنے کی کامیابی کا سب سے بڑا ثبوت ہے۔ امیت شاہ نے خبر رساں ایجنسی کیساتھ خصوصی بات چیت میں کہا”میں آرٹیکل 370 کی منسوخی پر سوال اٹھانے والوں کو بتانا چاہتا ہوں کہ ووٹر ٹرن آئوٹ میں ماضی میں 14 فیصد سے بڑھ کر سرینگر میں 40 فیصد ہونا اس فیصلے کی کامیابی کا سب سے بڑا ثبوت ہے۔” شاہ نے کہا کہ جب وادی کشمیر میں لوگ انتخابات کے بائیکاٹ کے نعرے لگاتے تھے، وہیں انتہا پسند گروپوں کے تمام ووٹروں نے اس سال انتخابات میں اپنا حق رائے دہی استعمال کیا۔مرکزی وزیر نے کہا”انتہا پسند گروپوں کے تمام رہنمائوں نے ووٹ دیا، اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا کہ وہ کس کو ووٹ دیتے ہیں، یہ ان کا حق ہے، لیکن کم از کم، وہ جمہوری عمل کا حصہ تھے، قبل ازیں انتخابات کے بائیکاٹ کے نعرے لگائے جاتے تھے، آج انتخابات پرامن طریقے سے ہوئے‘‘۔

 

یہ نوٹ کرتے ہوئے کہ انتخابات کے دوران سرینگر میں تشدد کا کوئی واقعہ نہیں پیش آیا ، شاہ نے کہا، “ایک لاٹھی بھی نہیں چلائی گئی،دھاندلی کی کوئی مثال نہیں ملی اور ووٹنگ صبر و تحمل سے کی گئی، جس میں کسی سیاسی جماعت کی طرف سے تشدد کی کوئی شکایت نہیں تھی۔ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ تبدیلی نظر آ رہی ہے۔”امت شاہ نے کشمیر کی 3 اہم لوک سبھا سیٹوں پر انتخاب نہ لڑنے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ جموں و کشمیر میں بی جے پی یونٹ کو اسمبلی انتخابات میں ہر سیٹ پر مقابلہ کرنے کی تیاری کرنی چاہیے۔امیت شاہ نے یہ بھی نشاندہی کی کہ بے گھر کشمیری پنڈتوں میں عام طور پر تین فیصد ووٹر ٹرن آئوٹ کے مقابلے، ان میں سے 40 فیصد سے زیادہ نے سرینگر لوک سبھا انتخابات میں ووٹ دیا۔انہوں نے کہا”پہلی بار، 40 فیصد سے زیادہ بے گھر کشمیری پنڈتوں نے انتخابات میں ووٹ دیا، آج تک یہ تعداد کبھی بھی 3 فیصد سے تجاوز نہیں کر پائی تھی، اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ لوگ اب خود پر بھروسہ رکھتے ہیں اور جمہوریت میں یقین رکھتے ہیں،” ۔انفارمیشن اینڈ پی آر ڈیپارٹمنٹ، جموں و کشمیر کے مرکزی علاقے کے مطابق سرینگر حلقہ، جس نے جموں و کشمیر میں آرٹیکل 370 کی منسوخی کے بعد پہلے عام انتخابات دیکھے، 37.99 فیصد ووٹنگ ریکارڈ کی گئی، یہ کئی دہائیوں میں سب سے زیادہ ووٹر ٹرن آئوٹ ہے۔سری نگر میں ووٹر ٹرن آئوٹ 1996 میں 40.94 فیصد، 1998 میں 30.06 فیصد، 1999 میں 11.93 فیصد، 2004 میں 18.57 فیصد، 2009 میں 25.55 فیصد، 2014میں 25.86 فیصد اور2019میں 14.43فیصدرہا۔وزیر داخلہ امت شاہ نے جمعہ کو وادی کشمیر کا اپنا مختصر دورہ مکمل کیا جس کے دوران انہوں نے بی جے پی اور مقامی سکھوں سمیت کئی وفود سے بات چیت کی۔انہوں نے بتایا کہ شاہ، جو جمعرات کی شام یہاں پہنچے تھے، جمعہ کی صبح نئی دہلی کے لیے روانہ ہوئے۔جمعرات کو یہاں شہر پہنچنے کے فورا ًبعد شاہ نے بی جے پی لیڈروں سمیت کئی وفود سے بات چیت کی۔ ایک پہاڑی اور گجر و بکروال وفد اور مقامی سکھوں کے ایک وفد نے شاہ سے ملاقات کی۔اسکے علاوہ وہ سیول سوسائٹی کے ایک وفد سے بھی ملاقی ہوئے۔