انڈر17ویمنز فٹ بال ورلڈ کپ کے انعقاد کو کابینہ کی منظوری

نئی دہلی//یو این آئی// مرکزی کابینہ نے ملک میں فیڈریشن ڈی فٹ بال ایسوسی ایشن (فیفا) انڈر۔17 خواتین ورلڈ کپ کے انعقاد کو ہری جھنڈی دے دی۔بدھ کو وزیر اعظم نریندر مودی کی صدارت میں مرکزی کابینہ کی میٹنگ میں اس سلسلے میں فیصلہ کیا گیا۔اطلاعات و نشریات کے وزیر انوراگ ٹھاکر نے یہاں ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ مرکزی کابینہ نے ملک میں انڈر۔17 خواتین کے فٹ بال ورلڈ کپ کے انعقاد کو منظوری دے دی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ ورلڈ کپ 11 سے 30 اکتوبر 2022 تک منعقد کیا جائے گا۔ یہ ورلڈ کپ پہلی بار ملک میں منعقد کیا جا رہا ہے ۔ اس سے قبل ہندوستان میں انڈر۔17 مینز ورلڈ کپ کا انعقاد کیا جا چکا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اس ایونٹ میں پوری دنیا سے نوجوان خواتین کھلاڑی اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کریں گی۔واضح رہے کہ فیفا نے 16 اگست 2022 کو ‘تیسرے فریقوں کی غیر ضروری مداخلت’ کا حوالہ دیتے ہوئے ہندوستان کو معطل کر دیا تھا، جس کے بعد ملک سے فیفا انڈر۔17 خواتین ورلڈ کپ کی میزبانی بھی چھین لی گئی تھی۔ فیفا نے کہا تھا کہ آل انڈیا فٹ بال فیڈریشن (اے آئی ایف ایف) اور فیڈریشن کے روزمرہ کے معاملات کو اے آئی ایف ایف انتظامیہ کے ہاتھ میں چلانے کے لیے تشکیل دی گئی ایڈمنسٹریٹرز کی کمیٹی کی تحلیل کے بعد معطلی کو ہٹا دیا جائے گا۔ضروری اقدامات کرتے ہوئے اے آئی ایف ایف کو اس کے جنرل سکریٹری سنندو دھر کے حوالے کیا گیا، جس کے بعد فیفا نے ہندوستان سے اپنی معطلی اٹھا لی۔ اس فیصلے کے ساتھ ہی فیفا نے انڈر۔17 ویمنز ورلڈ کپ کی میزبانی بھی ہندوستان کو واپس کر دی۔مسٹر ٹھاکر نے کہا کہ اس ایونٹ کے لیے اے آئی ایف ایف کو کھیل کے میدان کی دیکھ بھال، اسٹیڈیم میں تماشائیوں کی گنجائش، توانائی اور کیبل بچھانے اور گراؤنڈ اور ٹریننگ سائٹ کی برانڈنگ وغیرہ کے لیے 10 کروڑ روپے کی امداد دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ اس امداد کا مالی خرچ نیشنل اسپورٹس فیڈریشن (این ایس ایف) کو امدادی اسکیم کے لیے مختص بجٹ سے لیا جائے گا۔