انوراگ ٹھاکر کا ذرائع ابلاغ میں نئی راہیں تلاش کرنے پر زور

یو این آئی

نئی دہلی// مرکزی وزیراطلاعات و نشریات انوراگ ٹھاکر نے اپنی وزارت کے افسران، میڈیا اکائیوں اور انڈین انفارمیشن سروس افسران سے عوام سے رابطہ کاری میں نئے راستے تلاش کرنے اور اس سلسلے میں نئی تکنالوجیوں کو بروئے کار لانے کی اپیل کی۔ وزیر موصوف ’اچھی حکمرانی کے لیے ایک وسیلے کے طور پر شہریوں پر مرکوز ذرائع ابلاغ‘ کے موضوع پر آج نئی دہلی میں منعقدہ یک روزہ اجتماع ‘چنتن شِوِر’ کا افتتاح کرتے وقت ایک تقریب سے خطاب کر رہے تھے ۔ ملک بھر کے اطلاعات و نشریات کی وزارت کے سینئر افسران پر مشتمل ناظرین کو احتیاط برتنے کی تلقین کرتے ہوئے ٹھاکر نے کہا کہ میڈیا کا منظرنامہ تیزی کے ساتھ تغیر پذیر ہے اور اسی طرح معلومات کے تئیں لوگوں کا نظریہ بھی تبدیلی سے ہمکنار ہورہاہے ۔ لہٰذا 21ویں صدی کی ضرورتوں کی تکمیل کے لیے ہمیں معلومات کی تشہیر کے اپنے طریقہ کار اپنانے ہوں گے ۔وزیر موصوف نے کہا کہ انڈین انفارمیشن سروس حکومت کا ایک اہم جز ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس چنتن شِوِر نے افسران کو اطلاعات و نشریات کی وزارت میں تعاون ، خود احتسابی اور بروقت اصلاح کا منفرد موقع فراہم کیا ہے ۔ انہوں نے افسران کو وسائل کے بہتر استعمال، کوششوں کے لیے تعاون، اطلاعات ساجھا کرنے اور ایک واحد ٹیم کے طور پر کام کرتے ہوئے اپنے کام میں اعلیٰ اثرانگیزی لانے کے لیے حوصلہ فراہم کیا۔انوراگ ٹھاکر نے وزارت کے لیے ذرائع ابلاغ کے ہدف کے لیے واضح ترجیح کا ذکر کیا اور کہا کہ چونکہ حکومت پسماندہ طبقات کی فلاح و بہبود پر توجہ مرکوز کیے ہوئے ہے ، لہٰذا‘انتودیہ ’ کے اصول کو افسران کی سرگرمیوں کی رہنمائی کرنی چاہئے ۔