ام المومنین ؓ کے خلاف زبان درازی

سرینگر//آج تک نیوز چینل کے اینکرکے ام المومنینؓ کے بارے میں زبان درازی کرنے پر اتوار کو شیعہ ڈیولپمنٹ فائونڈیشن جموں کشمیر کے ارکان نے زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا ۔مظاہرین نے پریس کالونی میں اکٹھا ہوکر آج تک نیوز چینل اور اس کے اینکر روہت سردانا کے خلاف فلک شگا ف نعرے لگائے ۔ فائونڈیشن کے سیکریٹری یوسف حسین نے اس موقعہ پر انتہائی جذبا تی ہوکر کہا کہ روہت سردانا نے ام المومنین حضرت عائشہ صدیقہؓ اوردختر پیغمبر اسلام حضرت فاطمہ الزہراؓ کی شان میں گستاخی کرکے دنیا کے تمام مسلمانوں کے جذبات اور احساسات کو مجروح کیا ہے۔انہوں نے کہا ’’ہم کسی بھی حال میں پیغمبر اسلام کے خانوادے کے خلاف زبان درازی اور اہانت آمیزکلمات کو برداشت نہیں کریں گے ‘‘۔ انہوں نے مزیدکہا کہ اگر آج تک نیوز چینل نے روہت سردانا کے خلاف کوئی کارروائی عمل میں نہیں لائی یا مرکزی حکومت کی وزارت انفارمیشن نے اس نیوز اینکر کے خلاف کارروائی کرنے میں لیت ولعل کیا تو ہم پارلیمنٹ ہائو س کے باہر زوردار احتجاجی مظاہرہ کریں گے ۔ فاونڈیشن کے ایک اور عہدیدار الطاف احمد نے کہا مسلمانوں کے دل چھلنی ہوگئے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ہم اپنی جانیں قربان کریں گے لیکن کسی کو ان عظیم ہستیوں کی توہین کرنے کی اجازت نہیں دیں گے ۔انہوں نے مزید کہا کہ توہین رسول اور خانوادہ رسولؐ کے خلاف آواز بلند کرنا ہر مسلمان کا اولین فریضہ ہے ۔ انہوں نے آج تک نیوز چینل کے منتظمین سے اپیل کی کہ وہ روہت سردانا کے خلاف فوری کارروائی عمل میںلائیں ۔ انہوں نے حکومت سے بھی اپیل کہ وہ ا س نیوز چینل کے خلاف کارروائی عمل میںلائے ۔ مظاہرین نے پلے کارڑ اٹھارکھے تھے جن پر روہت سردانا مردہ باد ،اور آج تک پر پابندی لگائو نعرے رقم تھے ۔مظاہرین میں شامل ایک نوجوان نے کہا کہ اگر حکومت ذاکر نائک کے خلاف ایف آئی آر درج کرسکتی ہے تو روہت سردانا کے خلاف کیوں ایف آئی آر درج نہیں کیا جارہا ہے ۔