امیرجماعت پر عائد پبلک سیفٹی ایکٹ کالعدم | عدالت عالیہ کے دونفری بنچ نے رہائی کا حکم دیا

سری نگر//:جموں و کشمیر ہائی کورٹ نے جماعت اسلامی کے امیر عبدالحمید گنائی المعروف ڈاکٹر عبدالحمیدفیاض پرعائد پی ایس اے کو منسوخ کرکے انہیں رہا کرنے کا حکم جاری کیا ہے۔جموں و کشمیر ہائی کورٹ نے جماعت اسلامی کے صدر عبدالحمید گنائی پر عائد پبلک سیفٹی ایکٹ (پی ایس اے) کو کالعدم قرار کردیا۔ کے این ایس کے مطابق گزشتہ روز جسٹس رجنیش اُوسوال اور جسٹس سنجے دھر پر مبنی عدالت کی دونفری بینچ نے 2019 میں سنگل بینچ کے حکم کو ایک طرف رکھتے ہوئے کہا کہ انتظامیہ نے عبدالحمید گنائی پر پبلک سیفٹی ایکٹ عائد کرتے وقت اپنی ذہانت کا استعمال نہیں کیا ہے۔عدالت عالیہ کا مزید کہنا تھا کہ پولیس کی جانب سے پیش کئے گئے ڈوزیر سے بھی عبدالحمید گنائی کے خلاف کچھ ثابت نہیں ہوتا، اس لئے عدالت پولیس کو ہدایت دیتی ہے کہ وہ عبدالحمید گنائی کی رہائی کو یقینی بنائے اور اْن پر عائد پی ایس اے کو کالعدم قرار دیا جاتا ہے۔واضح رہے کہ اس سے قبل جموں وکشمیر ہائی کورٹ نے جماعت اسلامی کے امیر عبدالحمید گنائی کی اہلیہ کی جانب سے دی گئی درخواست کو مسترد کردیاتھا جس میں انہیں3 ستمبر 2020 کو بیٹی کی شادی کی تقریب میں شرکت کیلئے پیرول پر رہاکرنے کی درخواست کی گئی تھی۔