امریکی صدر کا مشرق وسطی سے متعلق بیان باعث اطمینان:انقلابی

  سرینگر//قومی محاذِ آزادی کے سینئر رُکن اعظم انقلابی نے امریکی صدردونالڈ ٹرمپ کی  مشرق و سطیٰ اور اسرائیل فلسطین کشمکش کے تعلق دئے گئے بیان پر اطمینان کا اظہار کیا ہے اور امید ظاہر کی کہ اُمت مُسلمہ خیراُمت اور اُمت وَسطَ کی حیثیت سے اپنے دعوتی مشن کی اہمیت اور ضرورت سمجھتے ہوئے میثاقِ مدینہ کے طرز پر دنیا کے عیسائیوں کے ساتھ مفاہمت او رموافقت کا ماحول پیدا کرنے کے لیے یہ قرآنی پیغام سنانے کی توفیق پاتے کہ مسلمان حضر ت ابراہیمؑ، حضرت موسیٰؑ، حضرت عیسیٰؑ اور پیارے نبی عربی ﷺ سمیت سبھی پیغمبروں کو تعظیم، توقیر اور تقدیس کی نگاہوں سے دیکھتے ہیں۔ اس دعوتی عمل کا لازمی نتیجہ یہ ہوگا کہ امریکہ، برطانیہ، جرمنی، فرانس جیسے ممالک ہمارے حلیف بن جائیں گے۔ اِن ممالک کے حکمرانوں کے دل پسیج جائیں گے اور وہ ماضی کی کوتاہیوں کا کفارہ ادا کرنے کی نیت سے مسئلہ فلسطین اور مسئلہ کشمیر کا ایک پرُ امن حل تلاش کرنے کی مہم میں بڑی سرُعت کے ساتھ مُثبت رول ادا کرنے پر کمر بستہ ہوں گے۔