امریکہ نے ڈرون بنانے والی چینی کمپنی پر پابندی عائد کردی

واشنگٹن// امریکی وزارت تجارت نے چین میں ڈرون تیار کرنے والی سرکردہ کمپنی ڈی جے آئی کے علاوہ 59 دیگر سائنسی اور صنعتی مینوفیکچرنگ یونٹوں پرپابندی عائد کرنے کا اعلان کیا ہے ۔امریکہ نے خارجہ پالیسی کے برخلاف ان کمپنیوں کو اپنی قومی سلامتی کے لئے خطرہ قرار دیا ہے ۔وزارت تجارت کی صنعتی اور سلامتی بیورو کی جانب سے جمعہ کے روز جاری کردہ فہرست کے مطابق چین میں ڈرون تیار کرنے والی ڈی جے آئی کے علاوہ 59 دیگر کمپنیوں کی سرگرمیوں کو قومی سلامتی کے لئے تشویشناک قرار دیا گیا ہے ، جس پر پابندی عائد کردی گئی ہے ۔چین کی جہاز رانی کمپنی ، بیجنگ انسٹی ٹیوٹ آف ٹکنالوجی کے ماتحت اداروں کے علاوہ نانجنگ ایروناٹکس اورخلابازی یونیورسٹی اورایسٹرو ناٹکس اور سیمی کنڈکٹر تیارکرنے والی کمپنیوں پر بھی پابندی عائد کردی گئی ہے ۔امریکی وزارت تجارت نے ایک بیان جاری کیاہے جس میں کہا گیا ہے کہ جن چینی کمپنیوں پر پابندی عائد کی گئی ہے وہ بحیرہ جنوبی چین میں فوجی سرگرمیاں بڑھانے ، چینی فوج کے لئے امریکی مصنوعات استعمال کرنے اور خفیہ جانکاریاں چرانے کے کام میں ملوث ہیں۔