امرناتھ یاترا2019: یاتریوں کی رجسٹریشن کا عمل سے شروع ہوا

جموں//امرناتھ یاترا کے سلسلے میں بال تل اور چندن واڑی راستوں سے گزرنے والے یاتریوں کی رجسٹریشن کا عمل یکم اپریل 2019 سے شروع کیا گیا۔رجسٹریشن 442 مقرر شدہ پنجاب نیشنل بینک، جموں اینڈ کشمیر بینک اور یَس بینکوں کے ذریعے ملک بھر میں عمل میں لائی جاسکتی ہے ۔ اس سال 46دنوں کی یاترا دونوں راستوں کے ذریعے یکم جولائی 2019 ء سے شروع ہوگی اور 15؍ اگست 2019ء کو رکھشا بندھن کے موقعہ پر اختتام پذیر ہوگی۔سی ای او امرناتھ شرائین بورڈ امنگ نرولہ نے کہا کہ یاتریوں کی سہولیت کے لئے ہر پڑائو کے بارے میں اطلاعات و تفصیلات بورڈ کی ویب سائٹ www.shriamarnathjishrine.com پر دستیاب رکھی گئی ہیں۔ویب سائٹ درخواست فارم اور متعلقہ بینکوں کے شاخوں کی تفصیلات بھی موجود ہیں۔سی ای او نے کہا کہ ہر ایک یاتری جو رجسٹریشن کا خواہاں ہوکو لازمی ہیلتھ سر  ٹیفکیٹ فراہم کرنی ہوگی۔اس سلسلے میں لازمی ہیلتھ سر  ٹیفکیٹ کا فارمیٹ اور ریاستی سطح پریہ سر  ٹیفکیٹ اجرا کرنے کا اختیار رکھنے والے ڈاکٹروں کی فہرست بھی ویب سائٹ پر دستیاب ہے۔یاترا 2019 ء کے لئے جو ہیلتھ سر  ٹیفکیٹ قابل قبول ہوگی وہ 15؍ فروری 2019 ء کے بعد جاری کی جانی ہونی چاہئے۔سی ای او نے مزید کہاکہ 13برس سے کم یا 75برس سے زیادہ اور 6ماہ والی حاملہ خواتین کو رجسٹریشن نہیں کی جاسکتی ہے۔اُمنگ نرولہ نے مشکل ترین راستوں پر مؤثر سیکورٹی کے انتظامات یقینی بنانے پر زوردیا۔صرف اُن یاتریوں کو آگے جانے کی اجازت ہوگی جن کے پاس یاترا پرمٹ موجود ہواور جس پر مقررہ تاریخ اور روٹ کی تفصیلات درج ہوں۔انہوں نے تمام خواہشمند یاتریوں سے اپیل کی کہ وہ پیشگی رجسٹریشن کے لئے ضروری لوازمات مکمل کریں اور صحیح وقت پر یاترا پرمٹ حاصل کریںتاکہ اُنہیں یاتراکے دوران کسی بھی قسم کی مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔جو یاترا ہیلی کاپٹر کے ذریعے یاترا کرنے کے خواہشمند ہوں انہیں پیشگی رجسٹریشن کی ضرورت نہیں ہے کیوں کہ ان کی ہیلی کاپٹرکی ٹکٹ اس مقصد کے لئے کافی ہوگی ۔ تاہم انہیں لازمی ہیلتھ سر  ٹیفکیٹ حاصل کرنی ہوگی۔