امام زین العابدین ؑ کا یوم شہادت | پونچھ میں مجالس عزاء وجلوس کا اہتمام کیاگیا

حسین محتشم

پونچھ//امام زین العابدین ؑ کے یوم شہادت کے موقع پر پورا عالم اسلام سوگوار و عزادار ہے۔امام زین العابدین علیہ السلام کے یوم شہادت اور اہل حرم کی اسیری کی یاد میں پورے ضلع پونچھ میں مجالس عزا اور نوحہ و ماتم کیا گیا۔امام بارگاہ عالیہ پونچھ، منڈی، سرنکوٹ، پلیرہ، گورسائی، مینڈھر، سلواہ، دیگوار سنئی اور دیگر مقامات غم کی اس تاریخ کی مناسبت سے بڑی بڑی مجالس عزا اور نوحہ و ماتم کا انعقاد ہوا۔امام بارگاہ پونچھ میں منعقدہ مجلس عزاء کا آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا ثناء خواں حضرات نے نعت، منقبت، قصیدہ، سلام و نوحہ پیش کئے۔اس دوران مولانا سید امان حیدر رضوی ہلوری نے خطاب کرتے ہوئے امام سجاد ؑکے مسائیل و فضائیل بیان فرمائے۔

دیگوار میں سید مشکور حسین شاہ کے گھر میں فرش عزاء بچھایاگیا۔ یہاں مولانا سید عابد حسین جعفری اور مولا سید کرار حسین جعفری نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حضرت امام سجاد علیہ السلام نے، جو واقعہ عاشورا کے موقع پر بیمار تھے، عاشورا کے بعد حضرت امام حسین علیہ السلام کی عظیم تحریک کی سنگین ذمہ داری سنبھالی اور اپنے پدر بزرگوار کے پیغام اور ان کے مشن کو آگے بڑھانے کا کام انتہائی باکمال طریقے سے انجام دیا اور تحریک عاشورا کے مقصد اور اس کے بنیادی فلسفے کو دنیا کے سامنے بھرپور انداز میں اجاگر کیا۔امام بارگاہ منڈی میں 25 محرم الحرام 1445ھ بروز ایتوار بعد نماز ظہرین مجلس عزامنعقد ہوئی۔مجلس عزا کا آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا یہاں بھی ثناء خواں حضرات نے نعت، منقبت، قصیدہ، سلام و نوحہ پیش کئے۔اس دوران مولانا سید امان حیدر رضوی ہلوری اور مولانا شیخ سعید حیدر قبلہ نے کہا کہ امام سجاد ؑکی دعاؤں کی شکل میں آپ کی انسان ساز تعلیمات کو کتاب صحیفہ سجادیہ میں یکجا کرنے کی کوشش کی گئی ہے جو اس وقت مسلمانوں کی انتہائی معتبر اور مقدس کتابوں میں سے ایک ہے۔انہوں نے کہا حضرت امام زین العابدین علیہ السلام، سن اڑتیس ہجری قمری میں مدینہ منورہ میں اس دنیا میں تشریف لائے۔ آپ نے ایسے دور میں زندگی بسر کی جو آل رسولﷺ پر بہت ہی سخت زمانہ تھا۔ امام بارگاہ عالیہ پلیرہ میں شب 25 محرم الحرام مجلس عزاء کا انعقاد کیا گیا۔اس دوران مولانا شیخ سعید حیدر نے خطاب کیا۔ اس کے علاوہ مینڈھر، گورسائی، سرنکوٹ، موہری گورسائی، سانگلہ، پنیالی اور دیگر مقامات پر مجالس عزا و جلوسہائے عزاء کا انعقاد کیا گیا۔