الگ الگ حادثوں میں ایک ہلاک ،ایک غرقآب

سرینگر//وادی میں الگ الگ حادثات میں ایک لڑکا ہلاک اور ایک غرقاب ہواجبکہ دومختلف مقامات پر دولاشیں بھی پائی گئیں جس وجہ سے ان علاقوں میں لوگوں میں سراسیمگی پیداہوئی۔گاندربل کے علاقہ نونر میں تیز رفتار ٹپر گاڑی نے 16 سالہ لڑکے کو  زور دار ٹکر مار کر ہلاک کردیا۔ادھر سرینگر کے علاقہ قمرواری میں اس وقت کہرام مچ گیا جب دس سالہ بچہ سیمنٹ کدل کے نزدیک دریا جہلم میں غرقاب ہوگیا۔نونر گاندربل میں منگل بعد از دوپہر تیز رفتار ٹپر زیر نمبر JK03D-8959نے راہ چل رہے 16 سالہ ساحل حسن راتھر ولد غلام حسن ساکنہ سرژ گاندربل کوزور دار ٹکر ماردی جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی ہوا۔مذکورہ لڑکے کو زخمی حالت میں اگرچہ فوری طور پر ضلع ہسپتال گاندربل منتقل کیا گیا تاہم ڈیوٹی پر موجود ڈاکٹروں نے اُسے مردہ قرار دیا.۔پولیس کے اعلی حکام نے معاملے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ معاملے کی نسبت کیس زیر نمبر 152/2021 درج کرکے ٹپر کو ضبط کرکے ڈرائیور کی گرفتاری عمل میں لائی گئی جبکہ قانونی لوازمات مکمل کرکے لاش پسماندگان کے سپرد کردی گئی۔ادھر سرینگر کے قمر واری علاقے میں شیزان احمد ملہ ولد فیاض احمد ساکنہ قمرواری نہانے کے دوران دریا جہلم میں غرقاب ہو گیا جس کے بعد اس کی باز یابی کیلئے کارروائی شروع کر دی گئی ہے ۔بونیار میں لور جہلم ہائیڈل پروجیکٹ کے آبی ذخیرے میں ایک عدم شناخت لاش پائی گئی جبکہ اکھرن کولگام میں میربازارمیں بھی ایک لاش پراسرار حالت میں پائی گئی۔ معلوم ہواہے کہ بونیار میںمنگلوار کو مقامی لوگوںنے آبی ذخیرے میں ایک لاش تیرتی ہوئی پائی۔ اس موقعہ پر لوگوںنے فوری طور پر پولیس کو مطلع کیا۔ پولیس اور ایس ڈی آر ایف ٹیم نے موقعہ پر پہنچ کر لاش کو بازیاب کیا پولیس کے مطابق ابھی تک لاش کی شناخت نہیں ہوسکی۔ادھرکولگام ضلع کے آکھرن (نوپورہ)میر بازارمیں سکھ نوجوان کی لاش پر اسرار حالت میں پائی گئی ۔نوپورہ میں اس وقت خوف و دہشت کا ماحول پھیل گیا جب علاقے میں ایک لاش بر آمد کی گئی۔مٹن اننت ناگ سے تعلق رکھنے والے 35 سالہ ویرو سنگھ ولد کرنیل سنگھ کی لاش سروس اسٹیشن کے نزدیک پر اسرار حالت میں پائی گئی، جس کے بعد مقامی لوگوں نے فوری طور پولیس کو مطلع کیا۔پولیس نے موقع پر پہنچ کر لاش کو اپنی تحویل میں لیکر معاملہ درج کرکے مزید تحقیقات شروع کردی ہے۔ذرائع کے مطابق نعش کااسپتال میں پوسٹ مارٹم کرایاگیا ،اوراسکے نمونے ضروری جانچ کیلئے فارنسک لیبارٹری بھیجے گئے۔پولیس نے اس سلسلے میں سی آرپی سی 174کے تحت معاملہ درج کرکے 35سالہ شہری کی پُراسرارموت کے حوالے سے تحقیقات شروع کردی ۔پولیس نے ضروری طبی وقانونی لوازمات کومکمل کرنے کے بعدمتوفی کی نعش لواحقین کے سپردکردی ۔