اقوام متحدہ کشمیر معاملہ میں ناکام :گیلانی

 سرینگر// حریت(گ) چیئر مین سید علی گیلانی نے اقوامِ متحدہ میں پاکستان کی طرف سے کشمیر کے حوالے سے اختیار کئے ہوئے مؤقف تاریخی حقائق کے عین مطابق اور بھارت کے سفیر کے بیان کو سفید جھوٹ اور اصل حقائق سے انحراف قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں ان کے اس بیان پر کوئی حیرانی نہیں ہوئی ہے، کیونکہ بھارت1947سے اپنی فوجی قوت کے غرور میں مبتلا ہوکر اصل حقائق سے منہ چھپاتے پھرتا ہے۔ اتنا بڑا اور جمہوری ملک ہونے کا دعویٰ کرنے والے اس کے سیاستدان اس اظہر من اشمس تاریخی حقیقت کو تسلیم کرنے کی تاب لانے کی ہمت نہیں کرپارہے ہیں اس لئے نہیں کہ وہ اس سے لاعلم ہیں، بلکہ صرف اس لئے کہ وہ اقتدار سے الگ ہوکر اپنے عوام کے ہھتے نہ چڑھ جائیں۔ گیلانی نے کہا  یہ خود بھارت کو بھی معلوم ہے جو جموں کشمیر کے مسئلے کو اقوام متحدہ میں لے کر گیا جہاں 18قراردادیں پاس کی گئی کہ جموں کشمیر کے لوگوں کو حقِ خودارادیت کا موقع فراہم کیا جائے گا۔ اقوامِ متحدہ کے سلامتی کونسل نے کشمیریوں کو حق ِخودارادیت کی واگزاری کی ضمانت فراہم کی ہے،البتہ یہ عالمی ادارہ اس ضمانت کو پورا کرنے میں ابھی تک کامیاب نہیں ہوا ہے۔