اقلیتوں کے مسائل پرکسی قیمت پر کوئی سمجھوتہ نہیں کریںگے : پرفل پٹیل

 یواین آئی

نئی دہلی/ نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) کے کار گذار صدر اور سابق مرکزی وزیر پرفل پٹیل نے کہاکہ پارٹی اقلیتوں کے مسائل پرکسی قیمت پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی۔ یہ بات یہاں نیشنلسٹ کانگریس پارٹی اقلیتی شعبہ کی میٹنگ کو خطاب کرتے ہوئے کہی ۔انہوں نے کہا کہ جانے والے پاکستان 1947 میں جا چکے ہیں اور پارٹی اقلیتوں کے ساتھ پوری طاقت سے کھڑی ہے۔ ساتھ ہی انہوں نے پارٹی کے لیڈروں سے سماج کے اندر تعلیم کے لئے بیداری مہم چلانے کی اپیل کرتے ہوئے کہاکہ اقلیتی سماج کے بچے تعلیم کے میدان میں انقلاب برپا کریں تاکہ وہ دنیا میں اپنا کھویا ہوا مقام حاصل کر سکیں۔ انہوں نے کہاکہ پارٹی اقلیتوں کیساتھ پوری طاقت کیساتھ کھڑی ہے۔ پرفل پٹیل نے کہا کہ کسی کو یہ شبہ نہیں ہونا چاہئے کہ ہم سکولر جماعت نہیں ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہماری بنیاد وں میں سیکولرز م موجود ہے۔

 

آئین اور قانون کی بالادستی پر ہمارا پورا یقین ہے۔ پرفل پٹیل نے مسلم ، کرسچن ، جین ، بودھ ، سکھ ، پارسی سمیت تمام اقلیتی طبقوں کے لیڈروں سے اپیل کی کہ پوری طاقت کیساتھ پارٹی کے منچ پر اپنی قومو ں کے مسائل اٹھائیں اور پارٹی اسے حل کرانے کیلئے پوری طاقت کیساتھ جدو جہد کرے گی۔ انہوں نے کہاکہ مظلوم کوئی ہو ہم اس کے حق میں آواز بلند کریں گے اور کبھی بھی مظلوموں کو مایوس نہیں ہونے دیں۔ انہوں نے کہاکہ ہمارے ملک کے پاس ایک مضبوط آئین ہے اور بابا صاحب کی قیادت میں بنائے گئے اس آئین میں تمام طبقوں کے مسائل کا مکمل حل موجود ہے۔ اس میں سبھی کے حقوق کی ضمانت ، اظہار رائے کی آزادی اور اپنے مذاہب پر چلنے کی پوری گارنٹی دی گئی ہے۔کوئی بھی انسان آئین سے بالاتر نہیں ہے۔این سی پی مہاراشٹر کے صدر اور پارٹی کے قومی جنرل سکریٹری سنیل تٹکرے نے اپنے بیان میں کہاکہ پارٹی میں سبھی کا استقبال ہے اور سب لوگوں کو اپنی بات کہنے کی آزادی ہے اور سبھی کیمسائل پارٹی میں سنے اور حل کئے جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی کسی بھی سماج کو مایوس نہیں کرے گی اور آئین میں ان کو دی گئی ضمانت کی تکمیل کیلئے جد وجہد کرے گی۔پارٹی کے قومی جنرل سکریٹری اور اقلیتی امور کے قومی صدر ایڈوکیٹ سید جلال الدین نے پارٹی میٹنگ میں آئے اپنے تمام لیڈران کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہاکہ ہم اپنے صدر اجیت پوار ، پرفل پٹیل اور سنیل تٹکرے سمیت تمام لوگوں کے مشکور و ممنون ہیں جنہوں نے ہمیں یہ یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ ہم اقلیتوں کے مسائل کیلئے جدوجہد کریں گے۔ انہوں نے کہاکہ ہندوستان ایک کثیر مذاہب اور کثیرلسانی ملک ہے۔ اس کی جڑوں میں سیکولرزم اور اہنسا ہے۔ انہوں نے کہاکہ فرقہ پرستی کا مقابلہ صرف محبت ، پیار اور بھائی چارے سے ہی کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے اقلیتی طبقات سے آنے والے بچوں سے تعلیم کیساتھ تربیت کے میدان میں اعلیٰ کردار ادا کرنے کی اپیل کی۔ ساتھ ہی انہوں نے کہاکہ ہم اقلیتوں کی نمائندہ جماعتوں سے اپیل کریں گے کہ وہ اپنے اپنے مسائل سے پارٹی کو روبرو کرائیں اور ہم انہیں پارٹی فورم پر پوری طاقت کیساتھ اٹھائیں گے اور سرکاروں کیساتھ مل کر ان کے حل کیلئے جد و جہد کریں گے۔ اس موقع پر میٹنگ میں ملک بھر سے پارٹی کے لیڈران نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔