اقربا پروری کے امکانات ختم :وزیر اعظم مودی

نیوز ڈیسک

سرینگر//وزیر اعظم نریندر مودی نے منگل کو روزگار میلہ میں 71000 سے زیادہ لوگوں کو تقرری کے خطوط دیتے ہوئے زور دیکر کہا کہ ان کی حکومت کی طرف سے بھرتی کے نظام میں لائی گئی تبدیلیوں نے بدعنوانی اور اقربا پروری کے امکانات کو ختم کر دیا ہے۔وزیر اعظم نریندر مودی نے گزشتہ9سالوں میں مرکز میں برسراقتدار بی جے پی کی حکومت کے ذریعے روزگار کے مواقع اور بنیادی ڈھانچے کی ترقی کے بارے میں وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ سرکاری ملازمتوں کیلئے درخواست دینے سے لیکر نتائج کے اعلان تک پورے عمل کو آن لائن کر دیا گیا ہے۔انہوں نے کہاکہ سرکاری ملازمتوں کے لئے بھرتی کے عمل میں ہونے والی بدعنوانی اور اقربا پروری کا امکان اب ختم ہو گیا ہے۔وزیر اعظم نے ای پی ایف او کے خالص پے رول کے اعداد و شمار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ2018-19 سے ساڑھے4 کروڑ سے زیادہ لوگوں کو ملازمتیں ملی ہیں کیونکہ رسمی روزگار میں اضافہ ہو رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایف ڈی آئی اور ملک کی ریکارڈ برآمد ہندوستان کے ہر کونے میں روزگار کے مواقع پیدا کر رہی ہے۔وزیراعظم مودی نے کہاکہ ملک نے اسٹارٹ اپ سیکٹر میں انقلاب دیکھا ہے اور ان کی تعداد 2014 سے پہلے کے چند سو سے بڑھ کر تقریباً ایک لاکھ تک پہنچ گئی ہے۔ پچھلے ایک سال کے ترقیاتی اعدادوشمار کا حوالہ دیتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ دیہی سڑکوں کی لمبائی4 لاکھ کلومیٹر سے بڑھ کر 7.25 لاکھ کلومیٹر ہو گئی ہے جبکہ ہوائی اڈوں کی تعداد 74 سے بڑھ کر تقریباً 150 ہو گئی ہے۔ 4 کروڑ سے زیادہ پکے گھروں کی تعمیرکے حوالے سے وزیراعظم مودی نے کہا کہ غریبوں کیلئے ایک سرکاری ہاؤسنگ اسکیم نے بھی روزگار کے بہت سے مواقع پیدا کئے ہیں۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ یونیورسٹیوں کی تعداد2014 میں720تھی ،جو اب بڑھ کر 1100 ہو گئی ہے۔وزیراعظم مودی نے ساتھ ہی کہاکہ سال 2014سے پہلے ملک بھر میں کل 400میڈیکل کالج تھے ،جن کی تعداداب بڑھ کر700ہوگئی ہے ۔