اسکین اینڈ شیئر کارکردگی | میڈیکل کالج بارہمولہ سرفہرست

فیاض بخاری

بارہمولہ// گورنمنٹ میڈیکل کالج بارہمولہ آیوشمان بھارت کے تحت مریضوں کیلئے آن لائن ٹوکن جنر یشن کے نفاذمیں تیزی سے کام کرہا ہے ۔ کیونکہ گورنمنٹ میڈیکل کالج (جی ایم سی) بارہمولہ اسکین اینڈ شیئر کیو مینجمنٹ سسٹم کے نفاذ کے ساتھ نمایاں کامیابی کا مظاہرہ کر رہا ہے۔

اعداد و شمار کے مطابق جی ایم سی بارہمولہ اب تک 29,000 سے زیادہ ٹوکن تیار کر رہا ہے اور خود کو جموں و کشمیر میں سرفہرست کارکردگی دکھانے والوں میں سے ایک ہے ۔جبکہ پورے ملک میں پانچوں نمبر پر ہے ۔ جی ایم سی بارہمولہ مریضوں کے لیے آیوشمان بھارت ہیلتھ اکاؤنٹ (ABHA) پر مبنی آن لائن ٹوکن جنریشن میں سرفہرست کارکردگی دکھانے والوں میں شمار ہوتا ہے۔ قابل ذکر بات یہ ہے کہ نیشنل ہیلتھ اتھارٹیز (NHA) نے ABDM کی فہرست میں شامل سہولیات میں QR-Code پر مبنی حل متعارف کرایا ہے تاکہ مریض اس سہولت کے QR کوڈ کو اسکین کر سکیں اور اپنی آبادیاتی تفصیلات اور صحت کے ریکارڈ کا اشتراک کر سکیں۔ اس سے صحت کی سہولیات پر لمبی قطاروں اور نامکمل اور غلط ڈیٹا کے اندراج کا مسئلہ کم ہو جاتا ہے۔ یہ سہولت سب سے پہلے جی ایم سی جموں، ضلع اسپتال گاندھی نگر، ایل ڈی اسپتال اور ایس ایم ایچ ایس اسپتال سرینگر میں 10 اپریل 2023 کو شروع کی گئی تھی۔

بعد میں جی ایم سی بارہمولہ نے امسال یکم مئی کو اس سروس کو اپنایا۔ ہسپتال کے میڈیکل سپرانٹنڈنٹ ڈاکٹر پرویز احمد مسعودی نے کہا کہ او پی ڈی میں سکین اینڈ شیئر کیو مینجمنٹ سسٹم متعارف کرائے جانے کے بعد سے اب تک کل 29,984 ٹوکن تیار ہو چکے ہیں۔ انہوںنے کہا کہ تقریباً ایک ہزار ٹوکن روزانہ کیو مینیجمنٹ سسٹم کے ذریعے بنائے جاتے ہیں۔ جس سے مریضوں کے لیے صحت کی دیکھ بھال کے دورے کے تجربے میں نمایاں بہتری آتی ہے۔ انہوںنے کہا کہ اس اقدام کے ذریعے تمام مریضوں کے ڈیجیٹل اندراج پر روشنی ڈالی جو ان کے صحت کی دیکھ بھال کے ریکارڈ کے تحفظ کو بھی یقینی بناتا ہے۔ انہوں نے کہا ’’فی الحال، ہم نے اسے OPD میں لاگو کیا ہے، لیکن ہم اسے دوسرے محکموں جیسے IPD، لیب ڈائیگناسٹک، اور فارمیسیوں تک پھیلانے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ اس جدید نظام نے مریضوں کے انتظار کے اوقات کو کافی حد تک کم کر دیا ہے۔ صرف QR کوڈ کو اسکین کرنے سے عمل پریشانی سے دورہو جاتا ہے‘‘۔ انہوںنے کہا کہ’’ہم ٹوکن جنریشن کے لحاظ سے ملک میں 5ویں نمبر پر ہیں جبکہ جموں کشمیر یونین ٹریٹری سطح پر اعلیٰ مقام پر فائز ہیںاور جی ایم سی بارہمولہ کا منسلک ہسپتال طویل عرصے سے کام کرہا ہے ۔